دنیا

ماہ اپریل میں بھارتی فوج نے 2 بچوں اور خاتون سمیت 33 کشمیریوں کو شہید کیا

شیعت نیوز: مقبوضہ جموں و کشمیر میں ماہ اپریل کے دوران بھارتی فوج نے 2 بچوں اور خاتون سمیت 33 کشمیریوں کو شہید کیا اور 152 افراد زخمی ہوئے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق اپریل کے مہینے میں بھی بھارتی ظلم و ستم جاری رہا، کورونا وائرس کے باوجود بھارتی فوج کے مظالم میں کوئی کمی نہیں آئی، گزشتہ سال اگست سے لاک ڈاؤن میں محصور کشمیریوں کو پہلے ہی اشیائے خورونوش کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : مجالس وجلوس شہادت مولاعلیؑ کےخلاف سندھ حکومت کا متصبانہ نوٹیفکیشن،شیعہ تنظیمات کامذمتی اجلاس

اس کے باوجود قابض فوج نے انسانی حقوق کو پامال کرتے ہوئے 2 بچوں اور خاتون سمیت 33 کشمیریوں کو شہید اور 152 افراد کو زخمی بھی کیا۔

ماہ اپریل میں سیاسی کارکنوں سمیت 845 افراد کو گرفتار کیا گیا، ظالم فوج نے 44 گھروں کو بھی مسمار کر دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عام آدمی کا طرز زندگی بہتر سے بہتر بنانے کے لیے عملی اقدامات کیے جائیں،علامہ راجہ ناصرعباس کا یوم مزدورپرحکومت سے مطالبہ

دوسری جانب جموں و کشمیر میں جمعہ کے روز کورونا وائرس کے مزید 25 کیس سامنے آگئے ہیں۔

حکومتی ترجمان روہت کنسل نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ تازہ 25 ٹیسٹ رپورٹ مثبت آنے کے بعد اب مرکز کے زیر انتظام علاقے میں مہلک وائرس میں مبتلاء افراد کی تعداد 639 تک بڑھ گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : مسلم حکمران سامراج کے سامنے امام حسینؑ کے انکار کی طرح ڈٹ جائیں، مفتی گلزار احمد نعیمی

روہت کنسل نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ فی الوقت جموں و کشمیر کے اندر 384 ایکٹیو کیس ہیں، ان میں وادی کشمیر میں 378 جبکہ جموں صوبے میں 6 کیس شامل ہیں۔

روہت کنسل نے تاہم بتایا کہ آج صحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد مثبت ٹیسٹوں کی نسبت زیادہ رہی۔ انہوں نے کہا کہ آج صحتیات ہونے والے افراد کی تعداد 31 ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close