مقبوضہ فلسطین

موساد کے سربراہ کا حماس عہدیداروں کے قاتلانہ حملوں کا اعتراف

شیعت نیوز : اسرائیل کےبدنام زمانہ خفیہ ادارے ’’ موساد ‘‘ کے سربراہ یوسی کوہین نے اعتراف کیا ہے کہ ان کی خفیہ ایجنسی نے پوری دنیا میں حماس کے عہدیداروں پر قاتلانہ حملے کیے۔

کوہن نے جمعہ کے روز عبرانی اخبار ’’بامشبحا‘‘ کو دیے گئے انٹرویو میں ان افسران کے نام ظاہر نہیں کیا جنہوں نے حماس رہنماؤں پر قاتلانہ حملوں میں ملوث ہیں تاہم انہوں نے اتنا کہا کہ حماس رہنماؤں کے قتل کے واقعات کو اسرائیل سے منسوب نہیں کیا جاتا۔

یہ بھی پٹھیں : اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کا اپنی حکومت سے شیعہ مخالف پراپیگنڈا مہم شروع کرنے کا مطالبہ

یوسی کوھین کا کہنا تھا کہ کچھ خفیہ ادارے موساد نے حماس کے ارکان پر قاتلانہ حملوں میں ہلاکتوں کا ارتکاب کیا لیکن دشمن نے اپنی حکمت عملی میں تبدیلی کی۔

خیال رہے کہ یوسی کوھین سنہ 2016ء موساد کا عہدہ سنھبالا اور ان کے عہدے کی مدت 2020ء تک ختم ہوگی۔

’’حماس‘‘ نے پچھلے کچھ عرصے میں موساد پر تیونس اور ملائشیا میں متعدد کارکنوں کے قتل کا الزام عائد کیا ہے ، جب کہ ’’اسرائیل‘‘ ان الزامات پر کوئی تبصرہ نہیں کرے گا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close