اہم ترین خبریںپاکستان

ایم ڈبلیوایم کا توہین قرآن مجید اور رسول اکرم ؐ کےگستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے خلاف ملک گیر احتجاج

مجلس وحدت مسلمین کے زیر اہتمام اسلام آباد، کراچی،لاہور،پشاور،ملتان ،کوئٹہ، گلگت بلتستان اور آزادکشمیر سمیت ملک کے مختلف شہروں میں پُرامن احتجاجی مظاہرے کیے گئے

شیعیت نیوز: فرانسیسی جریدے میں خاتم النبین حضرت محمد صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت اور سویڈن میں قران پاک جلائے جانے کے روح فرسا واقعات کے خلاف مجلس وحدت مسلمین کے زیر اہتمام اسلام آباد، کراچی،لاہور،پشاور،ملتان ،کوئٹہ، گلگت بلتستان اور آزادکشمیر سمیت ملک کے مختلف شہروں میں پُرامن احتجاجی مظاہرے کیے گئے جن میں مرکزی، صوبائی اور ضلعی رہنماؤں سمیت کارکنان کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

”روز حرمت قران و ناموس رسالت“ کے عنوان سے ہونے والے احتجاج کے شرکاءنے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جس میں اسلام دشمن صیہونی و نصرانی قوتوں کے خلاف نعرے درج تھے۔مظاہرین نے عالم استعماری و طاغوتی طاقتوں کے خلاف فلک شگاف نعرے بھی لگائے اور گستاخی کے مرتکب افراد کے خلاف ان کی حکومتوں سے عالمی قانون کے تحت سخت کاروائی کا مطالبہ بھی کیا۔

یہ بھی پڑھیں: عزاداروں کے خلاف ریاستی اداروں کے بدترین اقدامات،درجنوں مردو خواتین عزادار گرفتار

اسلام آباد سے احتجاجی مظاہرے کا آغاز امام بارگاہ اثنا عشری جی سکس ٹو سے ہوا جس میں مرکزی رہنماؤں اور ضلعی عہدیدران سمیت کارکنان کی بڑی تعداد شریک تھی۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی رہنماعلامہ محمد اقبال بہشتی نے کہا کہ اقوام عالم کو دوہرا معیار ترک کرنا ہو گا۔ دین اسلام کی تضحیک اور امت مسلمہ کی مسلسل کردار کشی شدید تہذیبی تصادم کی راہ ہموار کر رہی ہے۔جو عالمی طاقتیں مختلف مذاہب کے درمیان نفرت کی آگ بھڑکانے میں مصروف ہیں ان کا دامن بھی اس آگ سے محفوظ نہیں رہے گا۔انہوں نے کہا کہ دین اسلام کے مقدسات کی توہین دنیا کے دو ارب مسلمانوں کے مذہبی جذبات کو بھڑکانے کے مترادف ہے۔عالم اسلام کو بے بس سمجھنے والے احمق اور عالمی امن کے دشمن ہے۔

انہوں نے کہا کہ فرانس اور سویڈن گستاخی کے مرتکب عناصر کو قومی مجرم قرار دے کر دے کر ان کے خلاف فوری کاروائی کا اعلان کریں ۔اسلام کے خلاف مجرمانہ سرگرمیوں کا دفاع کرنے والی ریاستوں سے ہر قسم کے سفارتی و تجارتی تعلقات کا خاتمہ عالم اسلام کی غیرت کا تقاضہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ عالم اسلام کو دوٹوک موقف اختیار کرتے ہوئے اقوام عالم کو متنبہ کرنا ہو گاکہ جو دین اسلام کی توہین کسی بھی صورت برداشت نہیں جو بھی ملک دین اسلام کی تضحیک کا ارتکاب کرے گا اس کی مصنوعات سمیت ہر چیز کا مکمل بائیکاٹ کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: مولوی برقعہ پوش کیخلاف اسلام آباد میں جلوس حملے پر ایف آئی آر کی درخواست، اسلام آباد پولیس تذبذب کا شکار

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما ملک اقرار حسین نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آزادی اظہار رائے کے نام پر کسی کے عقائد یا مذہب پر حملہ نہیں کیا جا سکتا۔ان ہتھکنڈوں کے پس پردہ وہ طاغوتی طاقتیں ہیں دین جو دین اسلام کی بڑھتی ہوئی مقبولیت سے شدید خوفزدہ ہیں۔مسلمانوں کے مقدسات کو اسی مذہبی تعصب کی بنیاد پر نشانہ بنایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ جن مسلمان حکمرانوں کے دلوں میں ایمان کی ذرا سے بھی رمق باقی ہے وہ یقیناََیہود و نصاری سے تعلقات پر حرمت رسول کو مقدم سمجھتے ہیں اور اس ناپاک جسارت کے خلاف اپنی آواز بلند کریں گے۔نبی کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی شان میں گستاخی کوئی بھی مسلمان برداشت نہیں کر سکتا۔

علامہ ضیغم عباس نے کہا کہ باطل قوتیں عالم اسلام کے مقابلے میں مجتمع ہورہی ہیں۔امت مسلمہ کو چاہیے کہ وہ باہمی اختلافات کو فراموش کر کے دین اسلام کے پرچم تلے یک جان ہوں۔عالم اسلام کے مابین انتشار اور رنجشیں صیہونی و نصرانی طاقتوں کی سب سے بڑی کامیابی ہے۔ جو عالمی طاقتیں مسلمانوں کو ان کے فروعی اختلافات میں الجھا کر ایک دوسرے کے خلاف صف آرا کرنا چاہتی ہیں انہیں دانش و بصیرت سے شکست دینا ہو گی۔عالم اسلام کے اتحاد دشمنانان اسلام کی پیٹھ پر ننگی تلوار ثابت ہو سکتا ہے. تقریب سے جانثاران اہلبیت کے زاہد جعفری،انجینئر سید ظہیر حسین نقوی سمیت دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close