پاکستان

سانحہ شکارپور کے مجرموں کی عدم گرفتاری کیخلاف 15فروری کوشکارپور سے وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی تک لانگ مارچ کا اعلان

سانحہ شکار پورکے مجرموں کی عدم گرفتاری کیخلاف شکارپور سے وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی تک لانگ مارچ کیا جائے گا، آئندہ جمعہ سانحہ شکارپورکے خلاف سندھ بھرمیں ہڑتال کی جائے گی، سندھ حکومت سانحہ شکارپور کے ذمہ داروں کی گرفتاری میں لیت و لعل سے کام لے رہی ہے، ہم کبھی بھی اپنے شہدا کی قربانیوں کو رائیگاں جانے نہیں دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے رہنما اور شہدا کمیٹی شکارپور کے سربراہ علامہ مقصود علی ڈومکی نے شکارپور میں اجتماعی نماز جمعہ کے عظیم الشان اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت تکفیری دہشت گردوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہوچکی ہے، کالعدم جماتیں کھلے عام اپنی سرگرمیاں انجام دے رہی ہیں، حکومتی وزرا ء قاتلوں کی گرفتاری کے بجائے تکفیری دہشت گردوں کے سرپرست بنے ہوئے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اب شہدا کے خانوادوں نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ انصاف کے حصول کیلئے اور ظالم حکومت کے خلاف اپنی آواز بلند کرنے کیلئے شکارپور سے وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی تک لانگ مارچ کریں گے، ہم نے ہمیشہ پرامن جدوجہد کو اپنا شعار قرار دیا ہے لیکن سندھ حکومت نے ہمارے صبر کو نظرانداز کیا ہے، اب وقت آگیا ہے کہ ظالم وزیراعلیٰ کیخلاف پوری قوم یک آواز ہوکر صدائے احتجاج بلند کرے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارا لانگ مارچ اتوار 15 فروری کو قاتل وزیر اعلی سند ھ کے خلاف شکار پور سے کراچی کے وزیر اعلی ہاؤس کا گھیراؤ کرے گا۔ دوسری جانب شہداء کے لواحقین کی جانب سے کئے گئے اس اعلان کا ملت جعفریہ کی نمائندہ تنظیموں مجلس وحدت مسلمین،شیعہ علماء کونسل،امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن،اصغریہ آرگنائزیشن سمیت سندھ و شکار پور کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں نے حمایت کا اعلان کیا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close