اہم ترین خبریںپاکستان

یافث ہاشمی کاوفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ہم ترین مقام سے اغواءکیاجاناآئین اور قانون کے ساتھ مذاق ہے ،ناصرشیرازی

۔قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ذمہ داری ہے کہ یافث نوید ہاشمی کی فوری بازیابی کو یقینی بنایا جائے۔ان کے اہل خانہ دوست احباب سب اس وقت شدید قرب وتکلیف کے کیفت سے دوچار ہیں ۔

شیعت نیوز:مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل اور معروف قانون دان سید ناصرعباس شیرازی ایڈوکیٹ نے سابق مرکزی صدر آئی ایس او پاکستان، سابق نائب صدرہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن ملتان سید یافث نوید ہاشمی ایڈوکیٹ کی جبری گمشدگی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ایک محب وطن قانون دان کا اسلام آباد جیسے اہم شہر سے اغواءانتہائی افسوس ناک اور قابل مذمت اقدام ہے ۔ہم ان کی جلد از جلد باحفاظت بازیابی کا مطالبہ کرتے ہیں ۔ہم ان کی جبری گمشدگی کے خلاف تمام بارکونسلز کے ساتھ مل کر آواز بلند کریں گےخاموش نہیں بیٹھیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:یافث ہاشمی ایڈوکیٹ کی بازیابی کیلئے ایم ڈبلیوایم اور آئی ایس او کاملتان میں علامتی دھرنا

ناصرشیرازی ایڈوکیٹ نے کہاکہ پاکستان میں مکتب اہل بیت ؑ سے تعلق رکھنے کو جرم بنانے کی کوشش کی جارہی ہے ہم اس پر اپنی آواز بلندکریں گے۔ملی تنظیمیں خصوصاًمجلس وحدت مسلمین اور آئی ایس او مسنگ پرسنز کے مسئلے پر لیڈنگ رول پلے کریں گی۔ہم اس معاملے پر خاموش نہیں رہ سکتے ۔اس طرح سے کسی فردکو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ہم ترین مقام کے اغواءکیاجاناآئین اور قانون کے ساتھ مذاق ہے ۔قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ذمہ داری ہے کہ یافث نوید ہاشمی کی فوری بازیابی کو یقینی بنایا جائے۔ان کے اہل خانہ دوست احباب سب اس وقت شدید قرب وتکلیف کے کیفت سے دوچار ہیں ۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close