اہم ترین خبریںیمن

نئے بیلسٹک میزائل کی رینج سے جارح سعودی دشمن دنگ رہ جائے گا۔ یمن

شیعت نیوز : یمنی فورسز کے تشہیراتی ادارے کے نائب سربراہ کا کہنا ہے کہ ملکی افواج نے نئے بیلسٹک میزائلوں کی ایک نئی نسل تیار کی ہے۔

فارس نیوز کے مطابق بریگیڈیئر جنرل عبد اللہ بن عامر نے پیر کے روز المسیرہ ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ صنعا عنقریب ایک نئے بیلسٹک میزائل کی رونمائی کرے گا۔

یمن کی نیشنل سالیوشن حکومت کے وزیر اعظم کے دفاعی اور سلامتی کے امور کے معاون میجر جنرل جلال الرویشان نے بھی یمنی فورسز کی بڑھتی ہوئی دفاعی طاقت کی جانب اشارہ کرتے ہوئے اعلان کیا کہ یمنی میزائلوں کی رینج اس حد تک بڑھ گئی ہے کہ جارح سعودی دشمن دنگ رہ جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں : سعودیہ، عرب امارات اور اسرائیل کے حساس مقامات کی فہرست تیار کر لی، سربراہ یمنی انٹیلیجنس

الرویشان نے المیادین چینل سے گفتگو کرتے ہوئے اتوار اور پیر کی درمیانی شب سعودی عرب پر ہونے والے میزائلی حملے کی جانب اشارہ کیا اور کہا کہ اس حملے میں سعودی عرب کے فوجی مراکز اور بنیادی تنصیبات کو نشانہ بنایا بنایا گیا جس میں سعودی عرب کو کافی مالی اور جانی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

دوسری جانب یمن کی سیاسی کونسل کے رکن عبدالوہاب المحبشی نے کہا ہے کہ سعودی عرب خطے میں اسرائیلی اور امریکی مفادات کے لئے کام کررہا ہے۔

المحبشی نے کہا کہ یمن کی اسلامی تنظیم انصار اللہ کے سربراہ عبدالملک الحوثی نے اس سے قبل فلسطینیوں اور سعودی قیدیوں کے تبدالے کی تجویز پیش کی تھی کہ اگر سعودی عرب فلسطینی قیدیوں کو رہا کردےگا تو یمن سعودی عرب کے قیدیوں کو چھوڑ دے گا لیکن سعودی عرب نے اس تجویز کو رد کردیا جس سے ثابت ہوتا ہے کہ سعودی عرب اور اسرائیل دونوں فلسطینیوں کو تسلیم کرنے کے لئے ان پر دباؤ قائم کئے ہوئے ہیں ۔ سعودی عرب خطے میں اسرائیلی اور امریکی مفادات کے بتحفظ کے لئے کام کررہا ہے۔

خیال رہے کہ یمنی فورسز نے پانچ برسوں سے جاری سعودی جارحیت کے خلاف اپنی جوابی کارروائی کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے سعودی عرب کے جنوبی علاقوں خمیس مشیط اور ابہا میں فوجی مراکز پر میزائل داغے تھے۔

یمن کو مارچ دو ہزار پندرہ سے سعودی عرب کی بدترین جارحیت کے علاوہ سمندری، فضائی اور زمینی محاصرے کا بھی سامنا ہے اور اس دوران دسیوں ہزار یمنی شہری شہید و زخمی جبکہ لاکھوں بے گھر ہو چکے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close