کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
اہم ترین خبریںپاکستان

شہید علامہ حسن ترابی جیسی شخصیات صدیوں بعدپیدا ہوتی ہیں، علامہ ناظرتقوی

اگر شہید ترابی اور بھی قومی شخصیات کی پہچان کی دو وجوہات ہیں اور ہیں ایک انکے قومی امور میں دلچسپی اور دوسرا تنظیم کے ذریعے افراد کی پہچان ہوتی ہے

شیعت نیوز: دفتر تحریک جعفریہ مشھد مقدس کی طرف سے شہید علامہ حسن ترابی کی برسی کا انعقاد کیا گیا جس میں مشھد مقدس کے طلاب اور علمائے کرام نے شرکت کی اور برسی کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام مجید سے ہوا۔جناب برادر حسنین صاحب نے مرثیہ کے ذریعے شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا۔

برسی سے مولانا سید شفقت علی نقوی صاحب اور شیعہ علماء کونسل صوبہ سندھ کے صدر علامہ سید ناظر عباس تقوی صاحب نے خصوصی خطاب کیا اور شہید کے حالات اور قومی پلیٹ فارم کے ساتھ وابستگی پر مفصل انداز میں گفتگو فرمائی۔ انہوں نے فرمایا کہ شہید ترابی صرف صوبہ اور پاکستان کی حد تک کی شخصیت نہی تھی بلکہ بین الاقوامی شخصیت تھے انکی شہادت پر دوسرے مسالک کے علماء نے فرمایا کہ شہید ترابی جیسی شخصیات صدیوں بعد پیدا ہوتی ہیں۔

یہ خبر بھی لازمی پڑھیں:انتظامیہ علامہ ریاض حسین الحسینی کے گھر پر حملے کا فوری نوٹس لے، علامہ ناظرعباس تقوی

مولانا ناظر تقوی صاحب نے فرمایا کہ اگر تنظیم مضبوط ہوگئی تو شیعت مضبوط ہوگئی اور اگر شہید ترابی اور بھی قومی شخصیات کی پہچان کی دو وجوہات ہیں اور ہیں ایک انکے قومی امور میں دلچسپی اور دوسرا تنظیم کے ذریعے افراد کی پہچان ہوتی ہے۔انہوں نے کہا قائد محترم کی مدبرانہ پالیسی سے شیعت کو ہر میدان میں کامیابی ملی اور آج پاکستان میں کوئی ایسا ادارہ نہی جو شیعت اور قیادت کے بارے منفی سوچ رکھتا ہو یہ سب قائد محترم کی مدبرانہ پالیسی اور اعتدال کی وجہ سے ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close