پاکستان

پاکستانی زائرین کی مشکلات کے حل کے حوالے سے فوری اقدامات کی ضرورت ہے

تفتان بارڈر سمیت کچھ علاقوں میں پاکستانی زائرین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے

شیعت نیوز :پاکستانی زائرین لاکھوں کی تعداد میں ہر سال ایران اور عراق کی زیارات کے حوالے سے ایران آتے ہیں، مگر انہیں تفتان بارڈر سمیت کچھ علاقوں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔زائرین کی مشکلات حل کرنے کے حوالے سے بارڈر کے دونوں اطراف مناسب اقدامات کی ضرورت ہے۔

اطلاعات کے مطابق سربراہ ادارہ منہاج الحسینؑ لاہور و چیئرمین جعفریہ حج و عمرہ و زیارات ایسوسی ایشن پاکستان علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر نے تہران میں نمائندہ ولی فقیہ برائے امور حج و زیارات ایران علامہ سید عبدالفتاح نواب سے ملاقات کی اور انہیں ایران میں پاکستانی زائرین کو درپیش مسائل و مشکلات سے آگاہ کیا۔ ملاقات میں زائرین کے مسائل کو حل کرنے کے بارے میں لائحہ عمل بنانے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں :زائرین کیلئے بڑی خوشخبری، روس کا کوئٹہ تا تفتان نئی ریلوے لائن ڈالنے کا اعلان

علامہ محمد حسین اکبر نے بتایا کہ پاکستان سے پورا سال لاکھوں زائرین ایران کا سفر کرتے ہیں، مگر انہیں تفتان بارڈر سمیت کچھ علاقوں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، جس کیلئے ایران حکومت کو ان مشکلات کا راہ حل نکالنا چاہیئے۔

یہ بھی پڑھیں :زائرین کی مشکلات، قافلہ سالاروں کی ایم ڈبلیوایم رہنما اور فوکل پرسن حکومت پنجاب اسد عباس نقوی سے ملاقات

نمایندہ ولی فقیہ علامہ سید عبدالفتاح نواب نے کہا کہ پاکستانی ہمارے مہمان ہیں اور زائرین کی مشکلات کا احساس ہے، جنہیں ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مشہد میں باقاعدہ زائرین کی رہنمائی کیلئے الگ سے ادارہ موجود ہے، جبکہ قم میں بھی زائرین کیلئے خصوصی سہولیات فراہم کی گئی ہیں۔ اس موقع پر مولانا ملک محمد سبطین اکبر، مولانا سید حسین عسکری نقوی اور آقائے خم پیچی بھی موجود تھے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close