مشرق وسطی

قطر کا غیرملکی محنت کشوں کیلئے کفیل سسٹم ختم کرنے کا اعلان

شیعت نیوز : قطر نے غیرملکی مزدوروں کے قوانین میں تبدیلی لاتے ہوئے تارکین وطن کو ملک چھوڑنے کے لیے کفیل یا کمپنی کی اجازت کی ضرورت کو ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

رپورٹ کے مطابق قطر نے غیرملکی محنت کشوں کیلئے کفیل سسٹم ختم کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قطر کے وزیر محنت یوسف محمدالعثمان فخرو نے غیرملکی محنت کشوں کیلئے کفیل سسٹم ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کفیل سسٹم غلامی کے مترادف ہے اورجدید دنیا میں اس کی گنجائش نہیں۔

یہ بھی پڑھیں : سعودیہ نے عراق اور شام کے بعد یمن اور قطر کو نشانہ بنا رکھا ہے عادل عبدالمہدی

یوسف محمد العثمان فخرو نے مزید کہا کہ 2022 تک کم سے کم اجرت کا نظام بھی وضع کیا جائے گا۔

قطری وزیراعظم عبداللہ بن ناصر بن خلیفہ الثانی نے ٹویٹ کرتے ہوئے خبر کی تصدیق کی اور کہا کہ ‘پالیسیوں اور قانون میں اصلاح مزدوروں کے فلاحی معیار کو بہتر بنانے کے لیے کی گئی ہے، قطر مزدوروں کے بنیادی حقوق فراہم کرنے کے لیے پر عزم ہے’۔

واضح رہے کہ کفیل سسٹم میں غیرملکی محنت کش اجازت کے بغیرنہ تو کام چھوڑسکتاتھا نہ ہی ملک، جبکہ محنت کش کو اپنی اجرت کا ایک بڑا حصہ بھی کفیل کو دینا پڑتا تھا۔

علاوہ ازیں خاص طور پر سعودی عرب میں کفیل کے کئے گئے تشدد اور ظلم و ستم کے متعدد قصے اخبارات کی زینت بنتے رہے ہیں۔

انٹرنیشنل لیبرآرگنائزیشن اور غیر ملکی مزدوروں کی جانب سے قطرحکومت کے اقدامات کا خیرمقدم کیا جا رہا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close