اہم ترین خبریںپاکستان

یوم شہادت امام علی ؑ کے جلوسوں میں کسی قسم کی رکاوٹ قبول نہیں کریں گے، قاضی نیاز نقوی

انہوں نے کہا کہ اہل تشیع امیر المومنین حضرت علی علیہ السلام کو خاتم الانبیاء حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پہلے جانشین جبکہ برادران اہل سنت انہیں چوتھا خلیفہ مانتے ہیں

شیعت نیوز: وفاق المدارس الشیعہ پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے نائب صدر علامہ قاضی سید نیاز حسین نقوی نے مطالبہ کیا ہے کہ تراویح اور دیگر عبادات کی طرح یوم شہادت علی علیہ السلام کی مناسبت سے 21 رمضان المبارک کے جلوس اور مجالس کا انعقاد ممکن بنایا جائے، کسی قسم کی رکاوٹ  پیدا نہ کی جائیں۔ عزاداری پر کسی قسم کا کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اہل تشیع امیر المومنین حضرت علی علیہ السلام کو خاتم الانبیاء حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پہلے جانشین جبکہ برادران اہل سنت انہیں چوتھا خلیفہ مانتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: علامہ راجہ ناصرعباس کا وفاقی وزیر مذہبی امور کو ٹیلیفون،جلوس یوم علیؑ میں رکاوٹوں کا نوٹس لینےکا مطالبہ

لاہور میں علماء سے گفتگو میں علامہ نیاز نقوی کا کہنا تھا کہ عزاداری کے جلوس کسی کیخلاف نہیں۔ علما کے 20 نکات کے موقع پر صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے وضاحت کی تھی کہ انہیں احتیاطی تدابیر کیساتھ یوم شہادت علی ؑکے پروگرام بھی منعقد ہوں گے جبکہ ملی یکجہتی کونسل نے بھی اپنے حالیہ وڈیو لنک اجلاس کے اعلامیہ میں بھی اس کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان کی زیر صدارت اجلاس ، وفاقی کابینہ کا 9مئی سے لاک ڈاؤن میں نرمی پر اتفاق

علامہ نیاز نقوی نے یوم شہادت علی کے انعقاد میں حکومت اور پولیس کے تعاون کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے واضح کیا کہ کسی قسم کی رکاوٹ قبول نہیں کریں گے۔ انہوں نے حکومت سندھ سے یوم علیؑ کے جلوسوں پر پابندی کا نوٹیفیکیشن واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے واضح کیا کہ پاکستان میں مسلمان حکومت ہے، یہ مقبوضہ کشمیر نہیں کہ مولا علی علیہ السلام کی شہادت پر جلوس نہ نکالا جا سکے لٰہذا حکومت کسی قسم کی رکاوٹ کی بجائے، حکومت اور پولیس جلوس کے انعقاد میں تعاون کرے، کورونا وائرس سے بچاو کیلئے ہم حکومت سے تعاون کیلئے تیار ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close