اہم ترین خبریںپاکستان

مفکر پاکستان علامہ اقبالؒ نے اپنی شاعری سے پاک و ہند کے لوگوں کی فکر کو تبدیل کیا، علامہ راجہ ناصرعباس

انہوں نے کہا ہے کہ دور حاضر کا تقاضا ہے کہ ہم ان کی انقلابی و فکری شاعری کی ترویج اور اس پر عمل کرنے کی سعی کریں

شیعت نیوز: مفکر پاکستان ڈاکٹر علامہ اقبال نے اپنی شاعری سے پاک و ہند کے لوگوں کی فکر کو تبدیل کیا، آپ نے معاشرے کی ناصرف اصلاح کی بلکہ اپنی شاعری سے افراد کی ذہنی و فکری تربیت فرمائی۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ ناصر عباس جعفری نے یوم اقبال پر میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا۔

انہوں نے کہا ہے کہ دور حاضر کا تقاضا ہے کہ ہم ان کی انقلابی و فکری شاعری کی ترویج اور اس پر عمل کرنے کی سعی کریں، اپنے اندر خودی پیدا کریں، جو کہ ہماری قومی غیرت و حمیت کی ترجمانی کرسکے، اقبال کے خوابوں کی حقیقی تعبیر بنانے کے لئے ہر شخص کو اپنا انفرادی کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔

ڈاکٹر علامہ اقبال کی جدوجہد محض کسی زمینی ٹکڑے کے حصول کے لئے نہ تھی بلکہ ان کے پیش نظر ایک ایسے ملک کا حصول تھا، جہاں نظریہ اسلام کے مطابق ہر کسی کو آزادنہ زندگی بسر کرنے کا حق حاصل ہو، ایک ایسی مملکت جہاں کسی تفرقہ بازی، انتہاء پسندی اور عصبیت کی قطعاََ گنجائش موجود نہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ماہ ربیع الاول امت مسلمہ کی اتحاد وحدت کا عظیم عکاس ہے، علامہ سید احمد اقبال رضوی

انہوں نے مزیدکہاکہ آزادی کے بعد بدقسمتی سے ایسے حکمران اس ملک کے حصے میں آتے رہے، جنہوں نے اقتدار کو ملکی ترقی و استحکام کی بجائے ذاتی منفعت کا ذریعہ بنائے رکھا، قرارداد مقاصد اس امر کا تقاضہ کرتی تھی کہ اس ملک کے باسیوں کو قرآن و سنت کے اصولوں کے مطابق زندگی بسر کرنے کے مواقع میسر ہوں اور اقلیتوں کو مکمل مذہبی آزادی ملے۔

علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ ملک میں بسنے والے ہر طبقے کے جائز حقوق کا تحفظ ریاست کے ذمہ ہے، لیکن اس کے برعکس اس ملک میں ایسے تکفیری گروہوں کو پروان چڑھایا گیا، جنہوں نے اپنے مذموم عزائم کی تکمیل کے لئے اس ملک کی جڑیں ہلا کر رکھ دیں۔

انہوں نے کہا کہ وطن عزیز کی سالمیت و استحکام باہمی احترام اور اخوت و اتحاد میں مضمر ہے، جس کے فروغ کے لئے سب کو مل کر کوششیں کرنا ہوں گی، محض حکمرانوں کی طرف دیکھنے کی بجائے ہر شخص انفرادی طور پر تجدید عہد کرے کہ وہ اس ملک کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے بھرپور کردار ادا کرے گا۔

انہوں نے کہا یہ وطن ہمارے لئے اللہ تعالیٰ کی سب سے بڑی نعمت ہے، نعمتوں کی ناقدری کفر کا زینہ ہے۔ انہوں نے حکمرانوں سے مطالبہ کیا کہ وطن عزیز کو بیرونی مداخلت سے پاک کیا جائے، یہی اصل آزادی اور تمام مسائل کا حل ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close