اہم ترین خبریںپاکستان

امارات ، بحرین اور اسرائیل کے مابین معاہدہ عالم اسلام کے مفادات کے خلاف استکباری طاقتوں کا گٹھ جوڑہے، علامہ راجہ ناصرعباس

انہوں نے حکومت پاکستان سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل اورخلیجی ریاستوں کے باہمی روابط اور تعلقات کے حوالے سے اپنا موقف دوٹوک انداز میں واضح کریں

شیعیت نیوز: مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے امریکہ میں امارات، بحرین اور اسرائیل کے مابین ہونے والے معاہدے کو عالم اسلام کے مفادات کے خلاف استکباری طاقتوں کا گٹھ جوڑ قرار دیا ہے۔انہوں نے کہا ہے گریٹر اسرائیل کے منصوبے کو کامیاب بنانے کے لیے امریکہ نے اپنی عملی کوششیں اچانک تیز کر دیں ہیں۔ڈیل آف دا سنچری کی راہ میں ممکنہ رکاوٹ بننے والے ممالک کو ان کے داخلی معاملات میں الجھا کریہود ونصاریٰ بڑی تیزی کے ساتھ اپنے اہداف کی طرف بڑھ رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد میں کالعدم جماعتوں کا احتجاج اور شیعہ کافر کےنعرے ناجائز و غیر قانونی ہیں، سینیٹر رحمٰن ملک

انہوں نے کہا وہ مسلم ممالک جو امریکہ و اسرائیل کی صف میں شامل ہونے کو اپنی کامیابی سمجھتے ہیں وہ سخت مغالطے میں ہیں۔انہیں ماضی کے ان مسلمان حکمرانوں سے سبق سیکھنا ہو گا جنہیں امریکہ نے کمال ہوشیاری کے ساتھ استعمال کر کے اپنے ہی عوام کے ہاتھوں ذلیل ورسوا کیا۔امریکہ کی دوستی اور ظاہر اس خوشنما سانپ کی مانند ہے جو اپنے اندر جان لیوا زہر چھپائے ہوئے ہے۔وطن عزیز میں مذہبی منافرت کی موجودہ لہر کے پیچھے بھی ان استعماری قوتوں کے ہاتھ ہیں جو پاکستان کے عوام کی حساس عالمی موضوعات سے توجہ ہٹا کر انہیں آپس میں الجھائے رکھنا چاہتے ہیں تاکہ پاکستان کی طرف سے کسی بھی ردعمل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

یہ بھی پڑھیں: ملک میں جاری مذہبی منافرت اور کالعدم سپاہ صحابہ /لشکر جھنگوی کی سرکاری وریاستی سرپرستی کا پردہ فاش ہوگیا

انہوں نے حکومت پاکستان سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل اورخلیجی ریاستوں کے باہمی روابط اور تعلقات کے حوالے سے اپنا موقف دوٹوک انداز میں واضح کریں۔اسرائیل کے بارے میں پاکستان کے عوام کے جذبات کسی سے ڈھکے چھپے نہیں۔امید ہے کہ اس سلسلے میں پاکستانی دفتر خارجہ کا موقف عوامی امنگوں کا ترجمان ہو گا۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close