اہم ترین خبریںپاکستان

اشیائے خوردونوش مہنگے داموں فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت ترین کارروائی ہونی چاہیئے،علامہ احمد اقبال رضوی

انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے شروع کیے جانے والا احساس پروگرام اپنے اہداف کی طرف مطلوبہ رفتار سے نہیں بڑھ رہا۔

شیعت نیوز: مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ احمد اقبال رضوی نے ماہ رمضان میں بڑھتی ہوئی مہنگائی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انتظامی معاملات پر اپنی گرفت مضبوط کرے۔انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے باعث متوسط طبقہ پہلے ہی شدید مشکلات کا شکار ہے۔کاروبار کی بندش، معاشی مسائل اور بے روزگاری میں اضافے کا باعث بنی ہوئی ہے۔ایسی صورتحال میں چاہیئے تو یہ تھا کہ عوام کو ریلیف فراہم کیا جاتا لیکن اس کے برعکس عوام کو ان سرمایہ داروں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے جنہوں نے مافیا کی شکل میں ہر کاروبار میں اپنے پنجے گاڑے ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سیدہ کائنات حضرت فاطمتہ الزہراؑ کی زندگی سے اسلامی بہنوں، ماؤں، بچیوں کو حیاء کا درس ملتا ہے،ثروت اعجاز قادری

علامہ احمد اقبال رضوی نے کہا کہ عام اشیائے خوردونوش، سبزی اور پھلوں سمیت دیگر ضروریات زندگی کی من پسند داموں فروخت انتظامی معاملات سے حکومت کی عدم دلچسپی کا بین ثبوت ہے۔ روزمرہ استعمال کی اشیا کو مہنگے داموں فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت ترین کارروائی ہونی چاہیئے تاکہ مہنگائی کی چکی میں پسی ہوئے عوام سکھ کا سانس لے سکیں۔

یہ بھی پڑھیں: نماز تراویح ،حکومتی ایس اوپی نظراندازکرنے پر علامہ ابتسام الہیٰ ظہیر پر مقدمہ درج

انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے شروع کیے جانے والا احساس پروگرام اپنے اہداف کی طرف مطلوبہ رفتار سے نہیں بڑھ رہا۔اگر اس میں تیزی نہ لائی گئی تو غربت میں بے تحاشہ اضافہ اور عام آدمی کی زندگی شدید مشکلات کا شکار ہو جائے گی۔ مستحقین کے لیے شرائط میں نرمی برتی جانی چاہیے تاکہ کوئی بھی ضرورت مند اس حکومتی امداد سے محروم نہ رہے۔ ا نہوں نے کہا کہ عوام کو چاہیے کہ وہ کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سماجی رابطوں میں طبی ہدایات کو ملحوظ خاطر رکھیں۔ عوام کی ذرا سی بے احتیاطی پوری قوم کے لیے مشکلات کا باعث بن سکتی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close