دنیا

صدر ٹرمپ نے صیہونی ریاست کے طویل المیعاد منصوبے پر پانی پھیر دیا

شیعت نیوز: اسرائیل کے عبرانی ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شام میں کردوں کی حمایت سے دست برداری کا اعلان کرکے اسرائیلی فوج کے طویل المیعاد منصوبے پر پانی پھیر دیا۔

عبرانی ٹی وی چینل ’’12‘‘کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیل کے موجودہ آرمی چیف نے ’’کثیر سالہ‘‘ منصوبہ تیارکیا تھا جس کی نگرانی آرمی چیف اویو کوحاوی خود کررہےتھے۔

یہ بھی پڑھیں : صرف 5 منٹ سے کم وقت میں بھارت اور اسرائیل کو صفحہ ہستی سے مٹا دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں،سابق ایئر چیف

عبرانی ٹی وی چینل کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شام میں کرد آبادی کی حمایت سے دست برداری کا اعلان کرکے اسرائیل کے طویل المیعاد منصوبے پر پانی پھیر دیا۔

ٹی وی رپورٹ کے مطابق اسرائیل کے لیے امریکی صدر کا ترکوں کی حمایت ترک کرنا حیران کن ہے۔

اسرائیل کو یہ یقین نہیں تھا کہ وہ امریکہ شام میں کردوں کی حمایت سے دست بردار ہوگا۔ جیسے ہی ترکی نے شام میں کردوں کے خلاف آپریشن شروع کیا تو امریکہ نے وہاں سے اپنی فوج نکال لی۔ حالانکہ امریکہ نے اسرائیل کو یقین دلایاتھا کہ وہ شام میں کرد ملیشیا کی حمایت اور اس کی ہرممکن مدد کرے گا۔

اسرائیلی فوج کے ایک سینیر عہدیدار کا کہنا تھا کہ یہ ایک انتہائی سنجیدہ اقدام ہے۔ امریکی صدرنے اسرائیلی فوج کی قیادت کو اپنے منصوبے کو تبدیل کرنے پرمجبور کردیا۔

خیال رہے کہ اسرائیل کا کثیر سالہ منصوبہ 2016ء میں تیار کیا گیا تھا جسے 2020ء تک برقرار رہنا تھا۔ حالات کو دیکھتے ہوئے اس منصوبے میں توسیع کی جانا تھی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close