پاکستان

سانحہ آرمی پبلک اسکول میں ملوث اہم تکفیری سہولت کار آج تختہ دار پر لٹکا دیا گیا

تکفیری سہولت کار کو شہدائے اے پی ایس کی 5ویں برسی کے موقع پر پھانسی دے دی گئی

شیعت نیوز :سانحہ آرمی پبلک اسکول میں ملوث تکفیری دہشتگردوں کے اہم تکفیری سہولت کار کو آج شہدائے اے پی ایس کی 5ویں برسی کے موقع پر آج صبح تختہ دار پر لٹکا کر اس کے انجام تک پہنچا دیا گیا۔

اطلاعات کے مطابق سانحہ آرمی پبلک اسکول کے شہداء کی 5ویں برسی کے موقع پر سانحہ اے پی ایس میں ملوث تکفیری دہشتگردوں کے اہم سہولت کار اور کالعدم دہشتگرد جماعت تحریک طالبان پاکستان کے اہم رکن تاج محمد کو آج صبح پھانسی دے دی گئی۔زرائع کے مطابق تکفیری سہولت کار سانحہ آرمی پبلک اسکول کے علاوہ پاک فوج اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے جوانوں پر ہونے والے حملوں کی سہولت کاری میں بھی ملوث تھا۔تاج محمد ولد الف خان نے سانحہ اے پی ایس کیس کی سماعت کے دوران مجسٹریٹ کے سامنے اپنے جرم کا اعتراف کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں :تکفیری دہشتگردی کے خلاف جنگ میں آخری دم تک لڑیں گے، بلاول بھٹو زرداری

یاد رہے کہ سانحہ اے پی ایس میں ملوث 5 تکفیری دہشت گردوں مجیب الرحمان، سبیل عرف یحییٰ، حضرت علی، مولوی عبد السلام ولد شمسی اور تاج محمد شامل کو فوجی عدالتوں کی جانب سے سزائے موت سنائی گئی تھی۔تکفیری دہشت گرد مجیب الرحمان عرف علی عرف نجیب اللہ ولد گلاب جان کو پہلے ہی پھانسی دی گئی تھی۔سانحے میں ملوث تکفیری دہشتگرد سبیل عرف یحییٰ ولد عطا اللہ کا تعلق خیبر ایجنسی ،دوسرے دہشتگرد حضرت علی ولد اول باز کا تعلق درّہ آدم خیل سے تھا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close