یمن

سعودی عرب، جنگ بندی کی سختی سے پابندی کرے۔ تحریک انصار اللہ کی وارننگ

شیعت نیوز: یمن کی تحریک انصار اللہ نے سعودی عرب کی قیادت والے اتحاد کو وارننگ دی ہے کہ اسے سختی کے ساتھ جنگ بندی پر قائم رہنا چاہیے۔

یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے رکن اور تحریک انصار اللہ  کے اعلی رکن محمد علی الحوثی نے اتوار کے روز اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا ہے: امریکی، برطانوی، سعودی اور امارتی اتحاد اور ان کے حلیفوں کو باتیں کرنے اور موہوم سمجھوتے کی خلاف ورزی کے بارے میں بات کرنے کے بجائے، جو پوری طرح سے غلط ہے، اس چیز (جنگ بندی کے معاہدے) پر عمل کرنا چاہیے جس کا انھوں نے یکطرفہ طور پر اعلان کیا ہے۔

انھوں نے اسی طرح سعودی اتحاد کو یمن میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور اسی طرح یمن میں اس اتحاد کے ہر روز کے جرائم، بمباری اور محاصرے کے نتائج کے لیے براہ راست ذمہ دار بتایا ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کی قیادت والے اتحاد نے نام نہاد جنگ بندی کے دو ہفتے پورے ہونے کے بعد حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ اس جنگ بندی کی مدت مزید دو ماہ بڑھا دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : یمن: سعودی طیاروں نے غذا و دواؤں سے بھرے ٹرک تباہ کر ڈالے

المسیرہ ٹی وی نے گزشتہ ہفتے بتایا تھا کہ سعودی اتحاد نے صرف مآرب صوبے پر ہی ایک دن میں سولہ بار بمباری کی ہے اور جنگ بندی کے اعلان کے بعد سے کم از کم 67 بار اس کی خلاف ورزی کی ہے۔

دوسری جانب یمن کے اعلی فوجی آفیسر نے کہا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران یمن کے صوبے الحدیدہ پر 108 حملے کر کے سعودی اتحاد نے ایک بار پھر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے لیکن اس کے باوجود عالمی برادری خاموش ہے۔

یمن کے اعلی فوجی آفیسر نے العالم سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جارح سعودی اتحاد نے جنگ بندی کے دعووں کے بر خلاف گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران الحدیدہ کے مختلف علاقوں پر میزائلوں، راکٹوں اور توپ کے گولوں سے حملے کئے۔

المسیرہ ٹیلی ویژن چینل کی کل رات کی رپورٹ کے مطابق جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے گزشتہ چند گھنٹوں کے دوران یمن کے صوبے الجوف کے خب اور الشعف پر 5 مرتبہ جبکہ صوبہ مآرب کے صرواح علاقے پر 2 مرتبہ حملے کئے۔ ابھی تک ان حملوں کے نقصانات سے متعلق رپورٹ سامنے نہیں آئی ہے۔

یمن کے خلاف جنگ اور جارحیت کا سلسلہ ایسے وقت میں جاری ہے جب سویڈن میں صنعاء اور ریاض کے وفد کے مابین 18 دسمبر 2018 کو الحدیدہ میں جنگ بندی کا معاہدہ طے پایا تاہم سعودی جنگی اتحاد نے اپنی ہی اعلان کردہ جنگ بندی کی ایک دن بھی پابندی نہیں کی اور اس اعلان کے محض چند گھنٹے بعد ہی یمن کے رہائشی علاقوں اور شہری اہداف کو زمینی اور فضائی حملوں کا نشانہ بنانا شروع کردیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close