مقبوضہ فلسطین

سعودی عرب کی جیل میں قید حماس کے رہنما محمد الخضری کی جسمانی حالت ناگفتہ بہ ہو گئی

شیعت نیوز: صیہونی حکومت اسرائیل کی ایماء پر آل سعود حکومت کی طرف سے قید کئے جانے والے حماس کے 60 سے زائد حامی و رہنماؤں میں شامل سعودی عرب کے لئے حماس کے 80 سالہ خصوصی نمائندے محمد الخضری کی جسمانی حالت انتہائی خراب ہو گئی ہے۔

سعودی عرب کی جیلوں میں قید فلسطینیوں کے مسائل پر نظررکھنے والے گروپ ’’ضمیر کے قیدی‘‘ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودیہ کی جیل میں قید حماس رہنما ڈاکٹر محمد الخضری اور ان کے بیٹے ہانی الحضری کی حالت تشویشناک ہے۔

گروپ کی جانب سے ٹویٹر پرپوسٹ کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حماس کے نمائندے ڈاکٹر محمد الخضری کی انتہائی خراب صحت ہے کیونکہ اب وہ چلنے پھرنے سے بھی قاصر ہو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : غزہ میں کھلونا بم پھٹنے سے ایک 14 سالہ بچہ شہید، متعدد فلسطینی گرفتار

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ سعودی حکام کی طرف سے عید کے موقعے پر فلسطینی اسیران کو ان کےان کے اقارب اور اہل خانہ سے ملنے کی اجازت نہیں دی گئی۔ ڈاکٹر الخضری کے خاندان کے افراد کو صرف پانچ منٹ کے لیے ان سے ملایا گیا تھا۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی  پولیس نے فروری 2019ء کو ملک میں مقیم فلسطینیوں اور اردنی  شہریوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کیا تھا۔ اس کریک ڈاؤن میں حماس کے بزرگ رہنما اور تین عشرے سے سعودیہ میں موجود ڈاکٹرمحمد الخضری اور ان کے بیٹے ڈاکٹر ہانی الخضری سمیت درجنوں افراد کو حراست میں لے لیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : امریکی دھمکیوں کے باوجود ایران کا تیسرا تیل بردار بحری جہاز ونیزوئیلا کے سمندر میں داخل

دوسری جانب صیہونی فوج نے غرب اردن کے جنوبی شہر الخلیل میں واقع تاریخی مسجد ابراہیمی کی مرمت کے کام پر پابندی عائد کر دی ہے۔

مسجد ابراہیمی کے ڈائریکٹر الشیخ حفظی ابو اسنینہ نے بتایا کہ قابض صیہونی حکام نے الخلیل کی تعمیراتی کمیٹی کو حرم ابراہیمی کی مرمت کےکام سے روک دیا۔

الشیخ حفظی ابو اسنینہ نے بتایا کہ اسرائیلی حکام کی طرف سے مسجد کی مرمت کے کام پرپابندی کے لیے کہا ہے کہ فلسطینی تعمیراتی کمیٹی کےپاس مسجد ابراہیمی کی مرمت کا اختیار نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسرائیلی حکومت کی طرف سے مسجد ابراہیمی میں جاری مرمت اور صفائی کے کام پرپابندی مقدس مقام میں مداخلت اور مسجد پریہودی اجارہ داری قائم کرنے کا حصہ ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close