اہم ترین خبریںایران

سعودی عرب نے جیش العدل دہشت گردوں کو اسلحہ ، سازو سامان فراہم کئے۔ محمد پاکپور

شیعت نیوز: ایرانی سپاہ کے بری فوج کے سربراہ محمد پاکپور نے کہا ہے کہ امریکہ اور سعودی عرب کی طرف سے ایران میں سرگرم دہشت گردوں کو بڑے پیمانے پر مدد اور ہتھیار فراہم کئے جارہے ہیں ۔

ایران کے اسلامی انقلاب گارڈز کور (IRGC) کی زمینی فوج کے کمانڈر ، بریگیڈیئر جنرل محمد پاکپور نے منگل کو یہ اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جیش العدل نامی دہشت گرد گروہ کے ممبران نے شمال مغربی ، مغربی اور جنوب مشرقی سرحدوں پر سرگرم عمل ہے۔ یہ ملک اچھی طرح سے مسلح اور لیس ہے ، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ دہشت گردوں کو ’’امریکہ ، سعودی عرب اور ان کے علاقائی اتحادیوں کی مکمل حمایت حاصل ہے۔‘‘

یہ بھی پڑھیں : عین الاسد پر ایرانی میزائلی حملے نے امریکہ کی طاقت کا توازن دربرہم کردیا۔ جنرل سلامی

جنرل پاکپور نے کہا کہ ایرانی سپاہ نے ملک کے شمال مغرب، مغرب اور جنوب مشرقی علاقوں میں امریکہ کے حامی دہشت گردوں پر مہلک ضربیں وارد کی ہیں، سپاہ نے ان علاقوں میں سکیورٹی کو مضبوط بناتے ہوئے سکیورٹی کی ذمہ داریاں مقامی افراد کو سونپ دی ہیں۔

جنرل پاکپور نے کہا کہ سعودی عرب کی طرف سے جیش العدل گروہ کی حمایت اور مدد مسلسل جاری ہے۔ ایک عرب ملک نے اب تک ہتھیاروں سے لدے تین جہاز اس دہشت گرد گروہ کو فراہم کئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ایران کے اندر کم سے کم 4 ممالک دہشت گردوں کو مدد فراہم کررہے ہیں جن میں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، امریکہ اور اسرائیل شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : اسرائیلی وزیر اعظم کا ایران کے خلاف امریکی ، اسرائیلی اور سعودی اتحاد کی تشکیل کا انکشاف

انھوں نے کہا کہ غیر ملکی عناصر سے وابستہ دہشت گردوں پر ہماری قریبی نظر ہے۔

واضح رہے کہ ریاض کو وسیع پیمانے پر تکفیری دہشت گردوں کا ایک اہم کفیل خیال کیا جاتا ہے ، جو وہابی مذہب سے متاثر ہیں ، جو سعودی علماء کے ذریعہ تبلیغ کیا گیا تھا۔

ریاض کے ذریعہ فروغ پائے جانے والے انتہا پسند نظریے نے سعودی عرب اور ایران کو مشرق وسطیٰ میں مختلف تنازعات کے مخالف فریقوں پر ڈال دیا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close