سعودی عرب

سعودی دارالحکومت ریاض سمیت 2 شہروں پر بیلسٹک میزائلوں سے حملہ

شیعت نیوز : ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض کی فضائی حدود میں متعدد بیلسٹک میزائلوں کے زور دار دھماکے سنے گئے ہیں۔

ارنا نیوز کے مطابق سعودی ذرائع ابلاغ نے دعوی کیا ہے کہ ملک کے اینٹی ایئر کرافٹ یونٹ نے تین بیلسٹک میزائلوں کا پیچھا کر کے انہیں ریاض کی فضا میں تباہ کر دیا۔

اس ضمن میں غیر ملکی خبر ایجنسی نے بتایا کہ ریاض میں تین دھماکے سنے گئے ہیں تاہم سرکاری طور پر ان دھماکوں کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی جنگ میں شریک 2ہزار سےزائد تکفیری دہشتگردوں کی پاکستان میں تلاش جاری

سعودی ٹیلیویژن نے یمن پر جنگ مسلط کرنے والے سعودی فوجی اتحاد سے نقل کرتے ہوئے خبر دی ہے کہ سعودی دارالحکومت ریاض کی فضائی حدود میں حملہ آور 1 بیلسٹک میزائل کو اینٹی ایئر کرافٹ سسٹم کے ذریعے ہوا میں نشانہ بنایا گیا ہے۔

علاوہ ازیں سعودی عرب کے جنوبی شہر جیزان میں بھی 1 میزائل کو ہوا میں نشانہ بنایا گیا ہے تاہم کسی فریق کی جانب سے سعودی عرب پر بیلسٹک میزائلوں سے حملے کی ذمہ داری تاحال قبول نہیں کی گئی۔

قبل ازیں یمن پر جارح سعودی فوجی اتحاد کے وسیع ہوائی حملوں کے جواب میں متعدد سعودی و اماراتی علاقوں کو یمنی مسلح افواج اور عوامی مزاحمتی فورسز کی طرف سے جوابی کارروائیوں کا نشانہ بنایا جا چکا ہے۔

ادھر یمن کی مسلح افواج کے ترجمان یحییٰ السریع نے ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب اعلان کیا کہ سعودی اتحاد کے جنگی طیارے دار الحکومت صنعا پر حملہ کرنا چاہتے تھے جسے یمنی فورسز نے ناکام بناتے ہوئے انہیں فرار ہونے پر مجبور کر دیا۔

گزشتہ دو ہفتوں کے دوران ساتویں مرتبہ ایسا ہوا ہے کہ سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں کو یمن کی دفاعی طاقت کے سامنے تسلیم ہو کر آپریشن انجام دیئے بغیر، واپس جانا پڑا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی و مغربی حمایت کے زیر سایہ مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر سعودی جارحیت جاری ہے جس کے نتیجے میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید و زخمی ہو چکے ہیں جبکہ لاکھوں بے سر و سامانی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوئے ہیں۔ اس عرصے کے دوران یمن کو شدید طور پر دوا اور غذا کی قلت کا بھی سامنا رہا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close