سعودی عرب

سعودی اہلکاروں نے محمد بن سلمان کا خواب پورا کرنے کے لئے پورا گاؤں برباد کردیا

شیعت نیوز: سعودی عرب کے سیکورٹی اہلکاروں نے ولی عہد محمد بن سلمان کے نیوم منصوبے کے لئے ایک گاؤں خالی کروانے کی کوشش کے تحت عبد الرحمن الحویتی نامی ایک مقامی باشندے کو قتل کر دیا اور اس کے قبیلے کے 8 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : تیل کی جنگ ،سعودی ولی عہد بن سلمان کی روسی صدر پیوٹن کو ٹیلی فون پر دھمکیاں

شمال مغربی سعودی عرب کے علاقے میں واقع الخریبہ گاؤں کے باشندے عبد الرحمن الحویتی نے علاقہ خالی کرنے کے حکومتی فرمان کو ماننے سے انکار کر دیا تو سیکورٹی اہلکاروں نے اسے قتل کر دیا۔

معتقلی الرای نام سے چلنے والے ٹویٹر اکاونٹ پر یہ اطلاع دی گئی ہے۔ یہ اکاونٹ سعودی عرب کے سیاسی اور سماجی کارکنوں کا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : محمد بن سلمان کی مشکلات میں مزید اضافہ،جمال خشوگی قتل کیس، 20سعودی شہزادوں پر فردجرم عائد

ٹویٹر اکاونٹ نے سعودی عرب کے اندر اپنے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ یہ گرفتاریاں بھی اسی سبب ہوئیں کہ گاؤں کے باشندوں نے اپنا گھر بار چھوڑنے سے انکار کر دیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی سیکورٹی اہلکاروں نے 15 اپریل کو بتایا کہ صوبہ تبوک میں الحویتی ہلاک ہوا جو سیکورٹی اہلکاروں کو مطلوب تھا جبکہ 13 اپریل سے ہی سعودی سماجی کارکنوں نے اطلاع دینی شروع کر دی تھی کہ سیکورٹی اہلکاروں نے الحویتی کو قتل دیا۔

یہ بھی پڑھیں : روائتی بیلنس پالیسی ، کالعدم جماعتوں کی فہرست میں پرامن شیعہ تنظیمات کے نام دوبارہ شامل

الحویتی نے اس سے پہلے ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر جاری کیا تھا جس میں اس نے کہا تھا کہ اس کے قبیلے کے افراد سے گاؤں خالی کروانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close