یمن

سعودی اتحاد کی اٹھانوے بار جنگ بندی کی خلاف ورزی، داعش اور القاعدہ کے خلاف پیشقدمی

شیعت نیوز : جارح سعودی اتحاد نے گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران اٹھانوے بار الحدیدہ میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی۔ دوسری طرف یمنی فوج داعش اور القاعدہ دہشت گردوں کے ٹھکانوں کی جانب پیشقدمی کر رہی ہیں۔

المسیرہ ٹی وی نے جمعرات کو رپورٹ دی کہ جارح سعودی اتحاد الحدیدہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کے ساتھ ہی یمن کے دیگر علاقوں کو بھی اپنے حملوں کا نشانہ بنا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پاراچنار، معروف سماجی رہنما علامہ مزمل سمیت 4 شیعہ جوانوں کو اغوا کرلیا گیا

دوسری جانب یمن کی فوج اور عوامی فورسز جنوبی یمن میں داعش اور القاعدہ کے دہشت گردوں کے ٹھکانوں کی جانب پیشقدمی کر رہی ہیں۔

آئی آر آئی بی کی آج کی رپورٹ کے مطابق یمنی فورسز نے آج صوبہ البیضاء کے قیفہ علاقے میں جو داعش اور القاعدہ دہشت گردوں کی سرگرمیوں کا مرکز ہے پیشقدمی کی جس کے نتیجے میں کئی دہشت گرد ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

یمن کے فوجی ذرائع کا کہنا ہے کہ تکفیری دہشت گردوں کو شکست ایسے میں ہوئی کہ جب امریکی اور جارح اتحاد کے جنگی طیاروں نے دہشت گردوں کو نجات دلانے کیلئے یمن کی فوج اور عوامی فورسز کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔

یہ بھی پڑھیں : بحرین کی اماراتی قیادت کو اسرائیل کے ساتھ معاہدہ برقرار کرنے پر مبارکباد

اس رپورٹ کے مطابق یمنی فورسز کی پیشقدمی کی وجہ سے دہشت گرد گروہوں کے سرغنے مآرب کی جانب بھاگنے پر مجبور ہوئے۔

داعش اور القاعدہ دہشت گرد کافی عرصے سے صوبہ البیضاء اور جنوبی یمن کے کچھ علاقوں میں موجود ہیں اور انھیں سعودی اتحاد کی حمایت حاصل ہے۔

سعودی عرب ، امریکہ، متحدہ عرب امارات اور چند دیگر عرب ممالک کی حمایت سے مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ حملے کر رہا ہے ۔ سعودی عرب نے غریب عرب ملک یمن کا فضائی ، زمینی اور سمندری محاصرہ بھی کر رکھا ہے ۔

یمن پر سعودی جارحیت کے نتیجے میں اب تک لاکھوں یمنی شہید ، زخمی اوردربدر ہوچکے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close