سعودی عرب

سعودی خواتین شراب نوشی اور غیر مردوں سے جنسی تعلقات استوار کر سکتی ہے،مفتی ابوزقم

خواتین اپنے خاوندوں کی جانب سے استحصال کا شکار ہونے کے بجائے انہیں سبق سکھائیں

شیعت نیوز :سعودی خواتین اپنا غم بھلانے کے لئے شراب نوشی اور اور اپنے بے وفا شوہروں کو سبق سکھانے کے لئے غیر مردوں سے جنسی تعلقات استوار کر سکتی ہیں۔سعودی خواتین اپنے خاوندوں کی جانب سے استحصال کا شکار ہونے کے بجائے انہیں سبق سکھائیں۔

اطلاعات کے مطابق سعودی مفتی ابوزقم نے سعودی خواتین کے لئے ایک فتویٰ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اپنے بے وفا خاوند کی جانب سے انہیں نظر انداز کئے جانے پر پریشان ہوکر رونے پیٹنے کے بجائے اپنا غم مٹانے کے لئے شراب نوشی اور اپنے شوہروں کو سبق سکھانے اور اپنی جنسی خواہشات کو پورا کرنے کے لئے غیر مردوں سے جنسی تعلقات استوار کر سکتی ہیں۔سعودی مفتی نے جدہ میں نوجوانوں طلباء و طالبات کے ایک گروپ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ معاشرے میں فقط مرد زات کو ہی حق حاصل نھیں کہ وہ شراب پیئے،غیر عورتوں سے ناجائز تعلقات رکھے اور ہر وہ کام کرے کہ جس کی وہ طاقت رکھتا ہو اور کسی کو جوابدہ نا ہو۔

یہ بھی پڑھیں :آل بنو امیہ بن سلمان نے سرزمین انبیاء پر حرام خدا کو حلال قرار دے دیا

مفتی ابوزقم نے سعودی خواتین پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے بگڑے ہوئے شرابی اور زانی شوہروں کی بے وفائی پر رونے پیٹنے پر اکتفاء نا کریں، بلکہ وہ اپنے حقوق خصوصاً وہ حقوق کہ جس کی خواہش وہ اپنے شوہروں سے توقع کرتی ہیں نا ملنے پر اپنا دکھ درد شراب کے ساتھ بانٹیں اور اپنی جسمانی خواہشات کو پورا کرنے کے لئے خوبرو اور جاندار غیر مردوں خصوصاً جوانوں کے ساتھ جنسی تعلقات استوار کریں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close