سعودی عرب

سعودی شہر جدہ کے محلہ سلیمانیہ میں آگ بھڑک اُٹھی

شیعت نیوز : عرب ذرائع کے مطابق سعودی عرب کے شہر جدہ کے محلہ سلیمانیہ میں آگ بھڑک اُٹھی ۔

سعودی عرب کے شہری دفاع کے ادارے کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں مطابق آگ کے شعلوں پر قابو پانے کی تلاش و کوشش جاری ہے۔

اطلاعات کے مطابق سعودی شہر جدہ میں آگ کا آغاز موبائل اور متحرک کیبنوں کے ذریعہ ہوا جس نے بعد میں بڑے علاقہ کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ اس حادثے میں ہونے والے مالی اور جانی نقصان کے بارے میں ابھی تک کوئی اطلاع نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی عرب کی تازہ جارحیت،21 یمنی شہری شہید و زخمی

دوسری جانب اقوام متحدہ کے ساتھ ماہرین نے سعودی عرب کو ایک خط لکھ کر اس ملک کی جیلوں میں بند قانون کے شعبے کے کارکنوں کے ساتھ برے رویے کی وجہ سے سخت تنقید کی ہے۔

اقوام متحدہ کے ان ماہرین نے، جن میں اقوام متحدہ کی خصوصی رپورٹر ايگنیس کالامار بھی شامل ہیں، سعودی عرب کو ایک خط لکھ کر جیل میں عبد اللہ الحامد کی موت میں سعودی حکومت کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔

اقوام متحدہ کے ان ماہرین کا کہنا ہے کہ عبد اللہ الحامد کے ساتھ جیل میں اختیار کیا گيا برا رویہ اور انھیں بار بار کال کوٹھری میں قید کیا جانا، ان کی موت کا ممکنہ سبب ہو سکتا ہے۔

واضح رہے کہ عبداللہ الحامد سعودی عرب کے شہری تھے جنھوں نے قانون میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی تھی اور سن دو ہزار تیرہ سے جیل میں بند تھے۔ اپریل میں بتایا گيا تھا کہ انھیں برین ہیمبریج ہو گيا ہے جس کی وجہ سے وہ کوما میں چلے گئے ہیں۔ اس کے ایک ہفتے بعد ان کی موت کا خبر سامنے آئی تھی۔

عبداللہ الحامد سعودی عرب میں شہری و سیاسی حقوق کی ایک تنظیم کے بانی تھے اور ملک میں اصلاحات کا مطالبہ کر رہے تھے۔ انھوں نے اسی طرح سعودی عرب کی جیلوں سے سیاسی قیدیوں کی رہائی کا بھی مطالبہ کیا تھا۔

 

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close