ایران

سلامتی کونسل میں امریکہ کی اسنیپ بیک میکنزم کے نفاذ کی اپیل مسترد ہوگی۔ تخت روانچی

شیعت نیوز : اقوام متحدہ میں تعینات ایران کے مستقل مندوب تخت روانچی نے کہا ہے قانونی وجوہات کی بنا پر ہمیں یقین ہے کہ سلامتی کونسل ایک بار پھر امریکہ کی جانب سے اسنیپ بیک میکنزم کے نفاذ کی اپیل کا مسترد کرے گی۔

مجید تخت روانچی نے اقوام متحدہ میں منعقدہ اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جیسا کہ گزشتہ ہفتے کے دوران سلامتی کونسل نے ایران کے خلاف اسلحے کی پابندی میں توسیع سے متعلق امریکی قرارداد کا مسترد کر دیا ویسا ہی امریکہ کی جانب سے اسنیپ بیک میکنزم کے نفاذ کی اپیل مسترد ہوگی اور یہ امریکی حکام کیلئے انتہائی تباہ کن ہے۔

تخت روانچی نے کہا کہ امریکہ باضابطہ طور پر جوہری معاہدے سے علیحدہ ہوگیا ہے لہٰذا اس کو اسنیپ بیک میکنزم کے نفاذ کیلئے کوئی قانونی وجہ نہیں ہے کیونکہ اس کو ابھی جوہری معاہدے کے شراکت دار نہیں سمجھا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : ترکی میں آیا صوفیہ کے بعد ایک اور چرچ مسجد میں تبدیل

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے جو دلیل پیش کی ہے وہ ایک جعلی قانون ہے کیونکہ انہوں نے جوہری معاہدے کو چھوڑ دیا ہے اور وہ جوہری معاہدے سے متعلق میں مزید کوئی تبصرہ نہیں کرسکتے ہیں۔

تخت روانچی نے کہا کہ امریکہ نے اپنی اس تجویز سے اقوام متحدہ کے اراکین کا مذاق اڑایا ہے اور جیسا کہ سلامتی کونسل کے ممبرز نے گزشتہ ہفتے کے دوران امریکی تجویز کا مسترد کیا ویسا ہی وہ ایک بار پھر امریکی کی اس تجویز کا مسترد کریں گے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی حکومت، ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی سے ڈھائی سال گزرنے کے بعد پھر بھی جوہری معاہدے میں شراکت دار بننے اور اسے جوہری معاہدے کے تحت قرارداد 2231 کے میکنزم کے استعمال کرنے کے حق کا دعوی کرتی ہے۔

لہٰذا انہوں نے 13 اگست کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں 4 پیراگراف پر مشتمل ایران کے خلاف ایک قرارداد کو پیش کی؛ امریکی قرارداد کو سلامتی کونسل میں صرف دو ووٹ مل گئے؛ ایران مخالف قرار داد پر ہونے والی ووٹنگ میں گیارہ ممالک نے حصہ نہیں لیا، دو ممالک نے اس کی حمایت جبکہ دو ممالک نے اس کی مخالفت میں ووٹ ڈالے؛ قرارداد کے حق میں امریکہ کے علاوہ صرف جمہوریہ ڈومینیکن نے ووٹ ڈالا جبکہ روس اور چین نے اس کی مخالفت میں ووٹ ڈال کر اسے ویٹو کر دیا۔

اس کے بعد امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو نے 20 اگست کو اقوام متحدہ میں اسنیپ بیک میکنزم کے تحت ایران کیخلاف سلامتی کونسل کی منسوخ کی گئی قراردادوں کے از سر نو نفاذ کرنے کا مطالبہ کیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close