اہم ترین خبریںپاکستان

شیڈول فور سے دہشتگردوں کے ناموں کا اخراج،ملک میں انتہاپسندی پروان چڑھانے کی سازش

اُنھوں نے کہا کہ جن افراد کے نام انسداد دہشتگردی کے فورتھ شیڈول سے نکالے گئے ہیں ان میں سے زیادہ کا تعلق کالعدم تنظیموں سے رہا ہے

شیعت نیوز: پاکستان میں شیڈول فور میں شامل ملک دشمن تنظیم کالعدم سپاہ صحابہ /لشکرجھنگوی کے 3ہزار سےزائد خطرناک دہشت گردوں کے ناموں کو خارج کردیا گیا ہے۔ اس انکشاف کے بعدوطن عزیز میں عظیم قربانیوں اور کامیاب آپریشن ضرب عضب اور ردالفساد کے بعد پیداہونے والے امن وامان کو ایک مرتبہ پھر انتہاپسندی اور دہشت گردی کی بھینٹ چڑھانے کی سازش کا خدشہ ظاہر کیا جارہاہے۔

یہ بھی پڑھیں:امریکی، اسرائیلی وسعودی حمایت یافتہ دہشتگرد تنظیم داعش کاعراق میں حشدالشعبی پر حملہ 6مجاہدین شہید

تفصیلات کے مطابق پاکستان نے کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے ہزاروں ایسے افراد کو انسداد دہشتگردی کے شیڈول فور سے نکال دیا ہے جنھیں ریاستی یا معاشرے کیخلاف سرگرمیوں میں حصہ لینے کی بنا پر اس شیڈول میں شامل کیا گیا۔ بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق 2018 میں فناشل ایکشن ٹاسک فورس کو پاکستانی حکومت کی طرف سے جو فہرست پیش کی گئی تھی اس میں ایسے افراد کی تعداد 7 ہزار سے زیادہ تھی لیکن گزشتہ تقریباً دو برسوں کے دوران اس فہرست میں سے ساڑھے 3 ہزار سے زیادہ افراد کو نکال دیا گیا۔ دہشتگردی سے نمٹنے کے قومی ادارے نیکٹا کی ویب سائٹ پر ان افراد کی تعداد 3608 ہے، جنھیں ابھی تک فورتھ شیڈول میں رکھا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:مسلم حکمران سامراج کے سامنے امام حسینؑ کے انکار کی طرح ڈٹ جائیں، مفتی گلزار احمد نعیمی

بی بی سی کے مطابق آبادی کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے پنجاب کے محکمہ داخلہ کے ایک اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ فورتھ شیڈول سے نکالے جانیوالے سب سے زیادہ افراد کا تعلق اسی صوبے سے ہے اور یہ تعداد 1700 سے زیادہ ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ جن افراد کے نام انسداد دہشتگردی کے فورتھ شیڈول سے نکالے گئے ہیں ان میں سے زیادہ کا تعلق کالعدم تنظیموں سے رہا ہے اور گزشتہ دو برسوں کے دوران ان کی سرگرمیوں کے بارے میں متعلقہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے دی جانیوالی رپورٹ کو سامنے رکھتے ہوئے ان کے نام اس لسٹ سے نکالے جاتے ہیں۔ اہلکار کے مطابق جن افراد کے نام فورتھ شیڈول سے نکالے گئے ہیں ان میں ایسے افراد کی قابل ذکر تعداد بھی شامل ہے جن کے نام گزشتہ دس برسوں سے اس فہرست میں شامل تھے اور ان کے نام نکالنے کے حوالے سے ماضی میں کوئی فیصلے نہیں لیے گیے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:عام آدمی کا طرز زندگی بہتر سے بہتر بنانے کے لیے عملی اقدامات کیے جائیں،علامہ راجہ ناصرعباس کا یوم مزدورپرحکومت سے مطالبہ

صوبائی محکمہ داخلہ کے اہلکار کے مطابق جن افراد کے نام شیڈول فور کی فہرست سے نکالے گئے ہیں ان کے بارے میں متعلقہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے بنائی گئی کمیٹیوں کی طرف سے دی گئی سفارشات کو مدنظر رکھا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ہائیکورٹ کے حکم پر بھی متعدد افراد کے نام فورتھ شیڈول لسٹ سے نکالے گئے ہیں۔ اہلکار کا کہنا تھا کہ چونکہ کالعدم تنظیموں کیخلاف مؤثر کارروائی کی وجہ سے ان تنظیموں سے وابستہ افراد کی سرگرمیاں نہ ہونے کے برابر ہیں اور گزشتہ دو برسوں کے دوران ملک میں شدت پسندی کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے اس لیے ضلعی کمیٹیوں نے ان افراد کے نام فورتھ شیڈول سے نکالنے پر غور کیا گیا۔ اہلکار کے مطابق جن افراد کے نام اس فہرست سے نکالے گئے ہیں ان میں سے زیادہ تر افراد کا تعلق جنوبی پنجاب کے اضلاع سے ہے اور ان اضلاع میں بہاولپور اور بہاولنگر کے علاوہ بھکر اور میلسی بھی شامل ہیں۔ اہلکار کے مطابق یہ تعداد ایک ہزار سے زیادہ ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close