اہم ترین خبریںپاکستان

مولانا فضل الرحمٰن ملک میں انتشار اور انارکی کی فضا پیدا کرنے کے لئے نکلے ہیں ،علامہ شفقت شیرازی

علامہ ڈاکٹر شفقت حسین شیرازی نے مزید کہا کہ دھرنوں کا فائدہ پاکستان کو نہیں مودی سرکار کو ہے

شیعت نیوز: ملک کے وزیراعظم کو ڈنڈا بردار فورس کے ذریعے گرفتار کرنے کی دھمکی ملکی نظام سے بغاوت اور اعلان جنگ ہے،جس جس نے بھی کشمیر سے خیانت کی ذلت رسوائی اس کا مقدر ہوگی،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری امور خارجہ علامہ ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی نے اپنے بیان میں کیا۔

یہ بھی پڑھیں: مولانا کو گھیر کر اسلام آباد لانے والے دور سے تماشا دیکھ رہے ہیں ، اسدعباس نقوی

انہوں نے اسلام آباد میں جاری کرپٹ اور مسترد شدہ نام نہاد اپوزیشن کے دھرنے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مظلوم کشمیریوں کی آھیں اور انکا ناحق بہنے والے خون اس دھرنے کو بھا لے جانے کا کفیل ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وزارت داخلہ کی جانب سے مولانا فضل الرحمٰن عرف ڈیزل کی ذاتی فوج پر پابندی عائد

مولانا 1977 کی تاریخ دھرانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن اب زمانہ بہت بدل چکا ہے، اگر پی پی پی کی قیادت بھٹو کی صلبی اولاد کے پاس ہوتی تو انکے قاتلوں کے ساتھ ملکر عوامی منتخب حکومت گرانے دھرنے میں نہ جاتی۔

یہ بھی پڑھیں: مولانا فضل الرحمٰن کے مارچ سے قومی ہم آہنگی کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے،اسدنقوی

علامہ ڈاکٹر شفقت حسین شیرازی نے مزید کہا کہ دھرنوں کا فائدہ پاکستان کو نہیں مودی سرکار کو ہے کشمیریوں پر تین ماہ سے کرفیو مسلط کیا گیا ہے انکا سانس لینا مشکل ہو چکا ہےاور دوسری طرف ملک کے امن کو تباہ کرنے مولانا اسلام اباد پہنچ گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: وفاق المدارس الشیعہ کا مولانا فضل الرحمٰن کے دھرنے سے مکمل لاتعلقی کا اعلان

انہوں نے مزید کہا کہ مولانا فضل الرحمٰن ملک میں انتشار اور انارکی کی فضا پیدا کرنے کے لئے نکلے ہیں جس میں کامیابی ممکن نہیں عوام مولانا کے عزائم سے بخوبی واقف ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close