مشرق وسطی

شام: امریکی فوجیوں کو نکال باہر کرنے کیلئے قبائلی عمائدین کا مرکزی اجتماع

شیعت نیوز : شامی سرکاری خبررساں ایجنسی سانا کے مطابق شام کے شمالی صوبے الحسکہ سے تعلق رکھنے والے متعدد قبائلی عمائدین نے اپنے علاقے سے قابض امریکی فوجیوں کو نکال باہر کرنے کے لئے شہر ’’القامشلی‘‘ کے اندر متحدہ شامی اجتماع (تجمع سوریا الواحدۃ) کے نام سے ایک مرکزی اجتماع منعقد کیا ہے۔

شامی قبائل نے اپنے اجتماع میں بین الاقوامی دہشت گردی اور امریکی قبضے کے خلاف شامی افواج کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے ملک کے شمالی علاقہ جات کے تمام قبائل کو امریکہ و ترکی سمیت تمام غیر ملکی قابض فورسز کے خلاف بھرپور مزاحمت کی دعوت دی۔

شام کے شمالی صوبے الحسکہ کے اندر منعقد ہونے والے قبائلی عمائدین کے اس اجتماع نے اپنے مشترکہ بیان میں شامی عوام کے خلاف ہر قسم کی امریکی پابندیوں کے مقابلے میں ملکی قیادت اور مسلح افواج کی مکمل حمایت پر تاکید کی ہے۔

شامی قبائل کے اس اجلاس میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی قسم کی پابندیاں یا بیرونی دباؤ شامی قبائل کو ملکی سالمیت کے قومی اصول سے پیچھے ہٹا نہیں پائے گی۔

یہ بھی پڑھیں : ایران کا چار مغوی سفارت کاروں کی بازیابی کے لئے اقوام متحدہ سے تعاون کا مطالبہ

شامی قبائل نے اپنے اجتماع میں کرد ملیشیا (کرد ڈیموکریٹک فورس) کو امریکی چھتری تلے چلے جانے، قوم پر لگی امریکی پابندیوں کی حمایت اور ملک کی تعمیرِ نو و سیاسی راہ حل میں روڑے اٹکانے پر پر متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ منحوس امریکی اتحاد قوم کے تمام سپوتوں کو نشانے پر لے کر ملکی تزویراتی سرزمین اور بےبہاء دولت کو لوٹ رہا ہے جبکہ ایسی صورت میں اگر مسلح کرد ملیشیا قوم کی صف سے باہر نکل گئی تو تاریخ کی عدالت میں وہ قومی سرزمین کے چھینے گئے چپے چپے کی ذمہ دار ٹھہرے گی۔

شامی قبائل کے اس اجتماع نے امریکہ کی جانب سے ملکی قومی دولت لوٹنے کے لئے شامی سرزمین پر بنائے جانے والے غیر فوجی اڈوں کی شدید مذمت کی اور ملک کے اندر موجود قابض امریکی فوجیوں سے فوری طور پر ملکی سرزمین چھوڑ دینے کا مطالبہ کیا۔

جلسے کے اختتام پر جاری ہونے والے مشترکہ بیان میں شامی قبائل نے ملکی سرزمین سے امریکی و ترک قبضے کے فی الفور خاتمے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ شام کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے قومی سپوتوں کو چاہئے کہ وہ جلد از جلد آپسی مذاکرات شروع کر دیں تاکہ اس ذریعے سے قومی سطح پر ہونے والی ایک جامع گفتگو کا آغاز کیا جا سکے۔

شامی قبائل نے اپنے جلسے میں ایران و روس سمیت شام کے اندر امن و امان و استحکام بحال کرنے کے لئے کوشاں تمام شامی حلیفوں کا شکریہ بھی ادا کیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close