مشرق وسطی

شام: دمشق کے جنوبی علاقے پر اسرائیل کے طیاروں کا حملہ، 7 فوجی زخمی

یعت نیوز : شامی میڈیا کے مطابق غاصب اسرائیل کے طیاروں نے گذشتہ شب شامی دارالحکومت دمشق کے جنوبی علاقوں پر حملہ کیا ہے۔

شامی سرکاری خبررساں ایجنسی سانا کے مطابق غاصب اسرائیل کے طیاروں نے گذشتہ شب مقامی وقت کے مطابق 9:48 پر شام کی مقبوضہ ’’گولان ہائیٹس‘‘ سے دمشق کی جانب چند ایک میزائل فائر کئے جبکہ شامی اینٹی ایئر کرافٹ سسٹمز نے صیہونی طیاروں سے فائر کئے گئے میزائلوں کو ہوا ہی میں تباہ کر دیا البتہ منہدم ہونے والے میزائلوں کے ٹکڑے لگنے سے 7 شامی فوجی زخمی ہو گئے اور کئی ایک عمارتوں کو بھی جزئی نقصان پہنچا ہے۔

شامی سرکاری خبررساں ایجنسی نے اس حوالے سے لکھا ہے کہ غاصب صیہونی حکومت کی جانب سے ہونے والا یہ جارحانہ حملہ گولان ہائیٹس کے علاقے ’’مجدل الشمس‘‘ سے انجام پایا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سابق سعودی اعلیٰ عہدیدار سعد الجبری پر 11 ارب ڈالر کے غبن کا الزام

دریں اثنا ترکی کے فوجیوں نے شام کے صوبے الحسکہ کے علاقے القامشلی پر راکٹوں سے حملہ کیا ہے۔

شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے فوجیوں کی جانب سے شام کے صوبے الحسکہ کے علاقے القامشلی پر راکٹوں سے حملے میں کئی شامی باشندے زخمی ہوئے اور رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا۔

دوسری جانب عراق سے جدید ترین ہتھیاروں سے لیس امریکہ کے باوردی دہشت گرد ٹرکوں، گاڑیوں اور جنگی ساز و سامان کے ساتھ شام کے شمال مشرقی علاقے الحسکہ میں داخل ہو گئے۔

شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق دہشت گرد امریکیوں کا ایک کانوائے الحسکہ میں اپنے غیر قانونی فوجی اڈے کی جانب بڑھ رہا ہے۔

باوردی امریکی دہشت گردوں کے اس کانوائے میں 65 ٹرک اور بکتر بند گاڑیاں شامل ہیں اور وہ عراق کے راستے سے شام میں داخل ہوا ہے۔ اس سے قبل بھی امریکہ بارہا عراق کے راستے شام میں بھاری ہتھیار اور جنگی ساز و سامان منتقل کر چکا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close