مشرق وسطی

شام میں ترکی کے حمایت یافتہ تکفیری دہشت گردوں کا حملہ، چار افراد جاں بحق

شیعت نیوز: ترکی کے زیر قبضہ شمال مشرقی شام کے علاقے میں ہونے والے ایک دھماکے میں چار افراد جاں بحق ہو گئے۔

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یہ موٹرسائیکل دھماکہ صوبہ الحسکہ کے راس العین علاقے کے شلاح دیہات میں ہوا ہے۔ اس دھماکے میں چار افراد جاں بحق اور کئی زخمی ہوئے ہیں۔

ترکی کی فوج اور اس کے حمایت یافتہ تکفیری دہشت گرد گروہوں نے جمعرات کی شب بھی شمالی حلب میں واقع کئی دیہاتوں پر راکٹ حملے کئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں : ملک بھرمیں جلوس شہادت امام علیؑ اختتام پذیر،احتیاطی تدابیر پرعمل اور نظم وضبط کا بہترین مظاہرہ

ترکی کی فوج نے تکفیری دہشت گردوں کے خلاف جنگ کے بہانے شمالی شام کے کچھ علاقوں پر قبضہ کرلیا تھا اور ان علاقوں میں ترکی کے فوجی اب بھی تعینات ہیں۔

شمالی شام پر ترکی کی جارحیت اور بعض تکفیری دہشت گرد گروہوں کی حمایت کی عالمی حلقوں کی جانب سے بڑے پیمانے پرمذمت کی جا رہی ہے۔

دوسری جانب ترکی اور اس کے حمایت تکفیری یافتہ دہشت گردوں نے کل رات شام کے صوبے حلب پر راکٹوں سے حملہ کیا۔

رپورٹ کے مطابق شام کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ترکی اور اس کے حمایت یافتہ تکفیری دہشت گردوں نے کل رات شام کے صوبے حلب کے علاقوں عقیبہ ، صوغانہ، المالکیہ اور مرعناز پر درجنوں راکٹ فائر کئے۔ ابھی تک ان حملوں میں ممکنہ جانی نقصان کی تفصیلات سامنے نہیں آئیں۔

قابل ذکر ہے کہ ترکی تین برسوں سے شامی حکومت کی اجازت کے بغیر اس ملک میں موجود ہے اور شمالی شام کے بعض علاقوں کو اپنے قبضے میں لئے ہوئے ہے جس پر اسے عالمی سطح پرتنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

شام کا بحران دوہزار گیارہ میں اُس وقت شروع ہوا جب ترکی، سعودی عرب، امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے حمایت یافتہ تکفیری دہشت گردوں نے خطے کے موجودہ حالات کا رخ صیہونی ٹولے کے حق میں موڑنے کے لئے شام پر چڑھائی کی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close