مشرق وسطی

شامی فوج نے صوبہ حماہ کے دو دیہاتوں کو تکفیریوں سے آزاد کرا لیا

شیعت نیوز : شامی فوج نے صوبہ حماہ کے صحرائے السلمیہ کی جانب پیشقدمی کرتے ہوئے الروضہ اور جنی العلباوی دیہاتوں کو تکفیری دہشت گردوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا۔

المیادین ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شامی فوج نے اس کارروائی میں مشرقی صحرای السلمیہ میں اپنی پوزیشن مستحکم کرنے کے ساتھ ہی تکفیری دہشت گردوں کو بھاری جانی و مالی نقصان پہنچایا۔

شام کی فوج نے گذشتہ دنوں بھی صوبہ حماہ کے شمال مغرب میں طنجرہ، الفطاطرہ اور المنارہ دیہاتوں کو آزاد کرایا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ نے عراق میں اپنی فوج کی تعداد کم کرنے کا اعلان کر دیا

دوسری جانب دہشت گرد امریکی فوجیوں نے شام کے الجزیرہ علاقے میں تیل کے کنووں سے پچاس آئل ٹینکر خام تیل چرا کر الولید گذرگاہ کے راستے عراق پہنچایا ہے۔

امریکہ اور اس کے اتحادی دہشت گرد گروہوں کے خلاف جنگ کے بہانے شامی حکومت کی اجازت کے بغیر غیرقانونی طور پر شام میں موجود ہیں۔

امریکہ نے شمال مشرقی شام میں کردوں کے زیرقبضہ تیل کے علاقے میں اپنی فوجی موجودگی مضبوط بنانے کے لئے دوہزار انیس میں دیرالزور اور الحسکہ نامی صوبوں میں فوجی دستے روانہ کئے تھے۔

مغربی ایشیا میں دہشت گرد امریکی فوج کی سنٹرل کمانڈ نے اس سے قبل اعلان کیا تھا کہ امریکی فوجی شام کے تیل اور اس سے ہونے والی آمدنی کے لئے شام میں موجود رہیں گے۔

دوسری جانب شام کے عوام نے دارالحکومت دمشق میں ملک پر عائد امریکی پابندیوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔

شامی مظاہرین نے دہشت گردی اور اقتصادی جنگ کا مقابلہ کرنے کے لئے متحد ہوجانے اور بشار اسد و فوج کی حمایت جاری رکھنے پر زور دیا ہے۔

امریکی حکومت نے رواں مہینے سے سزار قانون کے تحت شام کے حکام، شخصیتوں اور اداروں پر مزید پابندیاں نافذ کردی ہیں۔ امریکی کانگریس نے شام کے خلاف سزار قانون دو ہزار انیس میں منظور کیا تھا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close