ایران

صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانا اسٹرٹیجک غلطی ہے۔ اسپیکر محمد قالیباف

شیعت نیوز : ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد قالیباف نے بعض فریقین کی جانب سے قدس کی غاصب اور جابر صیہونی حکومت سے تعلقات کو معمول پر لانے کو اسٹرٹیجک غلطی قرار دیا ہے۔

ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد باقر قالیباف نے فلسطین کی اسلامی مزاحتمی تنظیم حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو میں فلسطینی عوام کی مزاحمت اور حماس تحریک کے مجاہدین کی بہادری کی تعریف کرتے ہوئے صیہونی دشمن کے خلاف مزاحمت اور فتح کو جاری رکھنے میں فلسطینی گروپوں کے قائدین کے کردار کو سراہا۔

ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد قالیباف نے کہا کہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ یہ ثابت ہوا کہ صیہونی صرف مزاحمت کی زبان کو سمجھتے ہیں اور ان سے سمجھوتہ یا پھر ان کے سامنے عاجزی یا مجبوری بے فائدہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں : فلسطینی مزاحمت کے سامنے اسرائيل پسپا، غرب اردن کے الحاق کا منصوبہ ملتوی

انہوں نے کہا کہ ایران نے ہمیشہ فلسطینی عوام کی حمایت کی ہے اور ہم یقین رکھتے ہیں کہ فلسطینی جہد و جہد کرنے والوں کی کوششوں سے صدی کی ڈیل اور مغربی کنارے کے مقبوضہ علاقوں میں شامل ہونے کی حالیہ صیہونی سازش اور منصوبے ناکام ہو جائیں گے۔

اسماعیل ہنیہ نے محمد باقر قالیباف کو پارلیمنٹ کا اسپیکر منتخب ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ فلسطینی عوام اور حماس کی تحریک اس وقت تک اپنی مزاحمت جاری رکھے گی جب تک صیہونی مقبوضہ علاقوں کو نہیں چھوڑ دیتے۔

انہوں نے صیہونی حکومت کے قبضے اور اس حکومت کے تسلط اور توسیع پسندانہ اقدامات سے متعلق کچھ ممالک کی خاموشی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ہم خطے کے کچھ ممالک کی خاموشی کی مذمت کرتے ہیں جو صیہونی دشمن کے ساتھ اپنے تعلقات معمول پر لانے کی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے فلسطینی حکومت اور عوام کی بدستور حمایت کا شکریہ ادا بھی کیا۔

دوسری جانب ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے ایرانی اسپیکر کا قدس شریف کی فتح تک مزاحمت جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بات محمد باقر قالیباف نے آج فلسطین کے اسلامی جہاد تنظیم کے سیکرٹری جنرل زیاد النخالہ کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے القدس کی فتح اور غاصب صیہونیوں کے چنگل سے تمام مقبوضہ فلسطینی علاقوں کی آزادی تک مزاحمت جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

محمد قالیباف صیہونی حکومت کے قبضے کے خلاف فلسطینی عوام کی مزاحمت کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ فلسطینی مجاہدوں کی مزاحمت اور جدوجہد نہ تھی تو صیہونی جارحیت پسندوں کے خلاف ان کی قیمتی فتوحات کا احساس ہی نہیں ہوتی۔

مغربی کنارے کو مقبوضہ علاقوں کا الحاق کرنے کی سازش کی مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں نے ایرانی اسپیکر کی حیثیت سے غیر اسلامی پارلیمنٹوں کے رہنماؤں کو ایک پیغام میں اس معاندانہ اور نفرت انگیز صیہونی امریکی اقدام اور اس کے نتائج کے خلاف انتباہ کیا ہے۔

انہوں نے اس جعلی حکومت کو قانون توڑنے اور جارحیت کو جاری رکھنے کی اجازت دینے پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ ایران ہمیشہ خطے میں صیہونی ریاست کی سازشوں کے خلاف موثر اقدام اٹھایا ہے۔

النخالہ نے فلسطینی علاقوں میں فلسطینی پرچم بلند کرنے تک تمام مزاحمتی گروہوں کی جدوجہد جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close