دنیا

صیہونی ریاست کو کورونا کے سونامی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم

شیعت نیوز : اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے خبردار کیا ہے کہ آنے والے چند ہفتوں کے دوران صیہونی ریاست کو کورونا وباء کے ایک خوفناک سونامی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر اسرائیل میں محکمہ صحت کورونا بحران پرقابو پانے میں ناکام رہا ہے چند ہفتوں کے دوران اگراس وباء پرقابو نہ پایا گیا تو اس کے نتیجے میں صیہونی ریاست کورونا کے خوفناک طوفان کی لپیٹ میں آسکتا ہے۔

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاھو نے نامہ نگاروں سے ٹیلیفون پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کورونا وائرس کے کسی بھی خطرے سے آگاہ ہے اور ہم شہریوں کی جانوں کے تحفظ کے لیے ہرممکن کوشش کررہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر کورونا کی وجہ سے حالات بے قابو ہوئے تو 10 ہزار اسرائیلی اس وباء سے ہلاک اور کئی ملین متاثر ہوسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : اسرائیلی حکومت کو اب پتہ چلے گا کہ محاصرہ اور ناکہ بندی کیا ہوتی ہے؟

اسرائیل کے عبرانی ٹی وی چینل 12 کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی حکومت کے بعض وزراء اب بھی کورونا وائرس کے بڑے پیمانے پر پھیلنے کا امکان ظاہر کررہے ہیں۔

دوسری جانب اسرائیلی ذرائع ابلاغ کے مطابق کورونا کا شکار ہونے والے اسرائیلی فوجیوں کی تعداد میں مزید پانچ کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد کورونا وائرس کا شکار ہونے والے فوجیوں کی تعداد 25 ہوگئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ کورونا کا شکار ہونے والے بیشتر فوجیوں کی زندگی خطرے سے باہر ہے۔

ادھر اسرائیلی سرکاری ریڈیو میں پر نشر کی گئی ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ چند روز قبل 6 ہزار اسرائیلی فوجیوں کو قرنطینہ کیا گیا تھا۔اسرائیلی وزارت صحت کے مطابق کورونا وائرس کے شکار صیہونیوں کی تعداد 1656 ہوگئی ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close