اہم ترین خبریںپاکستان

جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کی پریس کانفرنس،لاپتہ عزاداروں کی بازیابی کا مطالبہ

شیعیت نیوز : شیعہ عزاداروں کی جبری گمشدگی اور عدم بازیابی کے خلاف جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کی جانب سے کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس کی گئی۔

پریس کانفرنس سے جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کے رہنما مولانا حیدر عباس عابدی نے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ موجودہ ملکی حالات تاریخ انسانیت کے مشکل ترین حالات ہیں ملک بھر میں سال دو سال اور دس سال سے زائد عرصے سے بھی لوگ لاپتہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک بھر کی طرح کراچی سے بھی پندرہ شیعہ عزادار لاپتہ ہیں دنیا کے مختلف ممالک سمیت ہمارے یہاں بھی کورونا وائرس کی وجہ سے قیدیوں کو رہا کیا گیاہمارے لاپتہ افراد کو اس دوران بھی رہا نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ عید پر ہمیں امید تھی کہ شاید ہمارے پیارے اب واپس آجائیں لیکن عید پر بھی انہیں رہا اور بازیاب نہیں کرایا گیا۔

پریس کانرنس سے خطاب کرتے ہوئے کمیٹی کے رہنماؤں نے کہا کہ اگر لاپتہ شیعہ عزادار کسی لاقانو یت میں ملوث ہیں تو ان کو عدالتوں میں پیش کیا جائے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ عدلیہ لاپتہ افراد کو بازیاب کروائے ان کے اہل خانہ کے دکھ درد کو محسوس کرے۔

جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کا دو تلوارچورنگی کلفٹن پر پُرامن احتجاجی مظاہرہ

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عارف علوی صدر پاکستان ہیں کراچی سے تعلق رکھتے ہیں انہیں بھی ان لاپتہ عزاداروں کے اہل خانہ کی تکالیف کا احساس نہیں لاپتہ افراد کے اہل خانہ نے صدر پاکستان کے گھر کے سامنے بھی احتجاج کیا،صدر پاکستان نے ان کے گھر کے باہر دیئے گئے دھرنے میں لاپتہ عزاداروںکو بازیاب کرنے کا وعدہ کیا تھاصدر مملکت کا وعدہ بھی پورا نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے کہتے ہیں لاپتہ عزادار ان کے پاس نہیں تو کیا بیرون ملک کی ایجنسیاں انہیں لے گئیں؟ آئین کے مطابق جسے بھی گرفتار کیا جائے گا اسے چوبیس گھنٹوں میں عدلیہ میں پیش کیا جائے گاہمارے قانون نافذ کرنے والے ادارے خود ہی قانون شکنی کر رہے ہیں ہمیں احتجاجی تحریک یا دھرنوں کی جانب نا دھکیلا جائے ۔

کانفرنس سے خطاب میں لاپتہ شیعہ نوجوان کی زوجہ کا کہنا تھا کہ نامعلوم افراد ہمارے گھر کی دیوار کود کے آئے اور میرے شوہر کو لے گئے ایک برس سے ان کا کوئی سراغ نہیں ہمارے بچے پوچھتے ہیں کہ ان کے والد کہاں چلے گئے اگر میرے شوہر مجرم ہیں تو انہیں عدالت میں پیش کر کے انہیں سزا دیں

کانفرنس میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان،آرمی چیف جنرل قمر باجوہ اور چیف جسٹس آف پاکستان گلزار احمدسے مطالبہ کیا کہ وہ جبری گمشدہ شیعہ افراد کی جلد از جلد بازیانی میں اپنا کردار ادا کریں۔

پریس کانفرنس میں مجلس وحدت مسلمین کے رہنما علامہ مبشر حسن،آئی ایس او پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علی اویس،شیعہ مسنگ پرسن کمیٹی کے علمدار حسین سمیت لاپتہ شیعہ افراد کے اہل خانہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close