اہم ترین خبریںپاکستان

رکن شیعہ علمائے کرام کا رویت ہلال کمیٹی کا بائیکاٹ، یزید کےحامی مفتی منیب کے استعفیٰ کا مطالبہ

تاہم آج رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس میں پنجاب سے تحریک حسینیہ پاکستان کے سربراہ علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر اور سندھ سے شیعہ علماء کونسل کے مولانا سید ارشاد حسین نقوی نے بائیکاٹ کر دیا ہے

شیعیت نیوز: ماہ صفر المظفر 1442ہجری کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج چیئرمین مفتی منیب الرحمٰن کی زیر صدارت منعقدہوا۔ مفتی منیب الرحمان کی جانب سے یزید لعین کی حمایت میں تقریر کرنے کے بعد شیعہ سنی علماء میں کافی غم و غصہ پایا جا رہا ہے۔ بہت سے شیعہ سنی علماء نے مفتی منیب کے اس موقف کی مذمت بھی کی ہے۔

تاہم آج رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس میں پنجاب سے تحریک حسینیہ پاکستان کے سربراہ علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر اور سندھ سے شیعہ علماء کونسل کے مولانا سید ارشاد حسین نقوی نے بائیکاٹ کر دیا ہے۔ دونوں رہنماوں نے کہا ہے کہ مفتی منیب الرحمان ایک یزیدی ہے، یزیدی فکر کا علمبردار ہے، یزیدیوں کا پشت پناہ ہے، لہذا اس کی چیئرمین شپ میں ہونیوالے رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس کا بائیکاٹ کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ٹریٹ سیداں مری،کالعدم سپاہ صحابہ کے امام بارگاہ پر حملے کےحقائق|| گل زہرا رضوی

علامہ محمد حسین اکبر نے کہا کہ ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس یزیدی کو فوری طور پر چیئرمین شپ سے ہٹایا جائے اور ان کی جگہ پر ایک سچا مسلمان، محب اہلبیتؑ اور معتدل شخصیت کو رویت ہلال کمیٹی کا چیئرمین مقرر کیا جائے۔ علامہ محمد حسین اکبر نے مطالبہ کیا کہ رویت ہلال کمیٹی میں مساوی سطح پر شیعہ علماء کو نمائندگی دی جائے۔

یہ بھی پڑھیں: ملک میں جاری مذہبی منافرت اور کالعدم سپاہ صحابہ /لشکر جھنگوی کی سرکاری وریاستی سرپرستی کا پردہ فاش ہوگیا

مولانا ارشاد حسین نے کہا کہ جب تک مفتی منیب الرحمان اس کمیٹی کے چیئرمین ہیں وہ اس کے اجلاس میں شرکت نہیں کریں گے۔ انہوں نے بھی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ کسی معتدل شخصیت کو رویت ہلال کمیٹی کا چیئرمین مقرر کیا جائے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close