پاکستان

کراچی: سانحہ ناظم آباد میںایک ہی خاندان کے 7 افراد فائرنگ کا نشانہ بنے، رپورٹ

شیعیت نیوز: سانحہ ناظم آباد دوران مجلس عزاء ایک ہی خاندان کے ساتھ عزادار سفاک دہشتگروں کی فائرنگ کا نشانہ بنے جن میں چچا محمد زکی خان سمیت ان کے تین بھتیجے باقر عباس زیدی، نیئر مہدی، ناصر عباس زیدی موقع پر ہی شہید ہوگئے. جبکہ دہشتگردی کے واقع میں زخمی دیگر بھائی نادر عباس زیدی، طاہر عباس زیدی اور شہید باقر عباس زیدی کا پندرہ سالابیٹا مرتضٰی علی زیدی سمیت شہید طاہر عباس زیدی کا آفس اسسٹنٹ چھبیس سالا اسد ابھی مقامی اسپتال میں داخل ہیں .

واضح رہے ظم آباد 4 نمبر میں شہید ہونے والے اور زخمی ہونے والے کوئی عام لوگ نہیں تھے.ان بھائیوں میں سے ایک بھائی ورلڈ بینک میں اور ایک UN میں اعلیٰ عہدوں پر فائز رہے ہیں. کئی سالوں بعد یہ بھائی محرم کیلئے پاکستان میں ایک ساتھ جمع ہوئے تھے. محمد زکی خان (زکّن بھائی) شہید محفل حیدری والے محمد وصی خان اور کے ایم ندیم ایڈووکیٹ سپریم کورٹ کے چھوٹے بھائی تھے.

مزید تفصیلات کے مطابق ناظم آباد واقع میں شہید اہلسنت ڈرائیور ندیم لودھی کی نماز جنازہ نارتھ ناظم آباد کوثر نیازی کالونی کی مسجد میں گزشتہ روز ادا کر دی گئی اور واقع میں شہید خاتون کی نماز جنازہ بھی ناظم آباد کی مقامی مسجد میں ادا کر دی گئی تھی.

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close