کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
پاکستان

پولیس کے اقدامات سے تو لاپتہ افراد قیامت تک بازیاب نہیں ہوں گے، سندھ ہائیکورٹ

جسٹس نعمت اللہ پھلپھوٹو نے ریمارکس دیے پولیس جس طرح اقدامات کررہی ہے اس طرح تو لاپتا افراد قیامت تک بازیاب نہیں ہوں گے، ہمیں نتائج چاہئیں، کاغذی کارروائیوں سے کچھ نہیں بنتا

شیعت نیوز: سندھ ہائیکورٹ نے 70 سے زائد لاپتا افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں پر سیکرٹری داخلہ، آئی جی سندھ، ڈی جی رینجرز اور دیگر کو 7 اگست تک رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیدیا۔

جسٹس نعمت اللہ پھلپوٹو اور جسٹس کے کے آغا پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو 70 سے زائد لاپتا افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی تو پولیس تحقیقات پر عدالت نے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔

جسٹس نعمت اللہ پھلپھوٹو نے ریمارکس دیے پولیس جس طرح اقدامات کررہی ہے اس طرح تو لاپتا افراد قیامت تک بازیاب نہیں ہوں گے، ہمیں نتائج چاہئیں، کاغذی کارروائیوں سے کچھ نہیں بنتا، جے آئی ٹی کے کئی کئی سیشن کے باوجود لاپتا افراد کا کوئی سراغ نہیں لگایا جاتا، جے آئی ٹی افسران اپنی ذمہ داری پوری نہیں کرتے۔

Show More

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close