اہم ترین خبریںپاکستان

سپاہ صحابہ رمضان مینگل گروپ کے دہشتگرد کا اورنگزیب فاروقی کے حامیوں پر خودکش حملہ

مارے گئے 7 افراد میں سے 5 افراد کا تعلق سپاہ صحابہ اورنگزیب فاروقی گروپ سے ہے

شیعت نیوز :سپاہ صحابہ رمضان مینگل اور اورنگزیب فاروقی گروپ کے درمیان آپسی جنگ شدت اختیار کر گئی۔ 22 جمادی الثانی کی مناسبت سے  پریس کلب پر ہونے والے احتجاج پر خودکش حملہ۔

یہ بھی پڑھیں :سپاہ صحابہ رمضان مینگل گروپ کے دہشتگردوں کا کوئٹہ کی مسجد میں بم دھماکہ، 13نمازی شہید

اطلاعات کے مطابق کوئٹہ میں کالعدم سپاہ صحابہ رمضان مینگل گروپ اور کالعدم سپاہ صحابہ اورنگزیب فاروقی گروپ کے درمیان گزشتہ چند سالوں سے جاری اقتدار کی جنگ آج اس وقت انتہائی شدت اختیار کر گئی کہ جب کوئٹہ پریس کلب پر کالعدم سپاہ صحابہ اورنگزیب فاروقی گروپ کی جانب سے کئے جانے والے احتجاجی مظاہرے پر ہونے والے خودکش حملے میں 7 افراد مارے گئے۔ زرائع کے مطابق آج 22 جمادی الثانی کی مناسبت سے کالعدم تکفیری دہشت گرد جماعت سپاہ صحابہ کی جانب سے نکالی گئی ریلی میں موجود دو گروپوں کے درمیان لڑائی اس وقت شدت اختیار کر گئی کہ جب کالعدم سپاہ صحابہ کے مقامی دہشت گرد سرغنہ  نے رمضان مینگل گروپ کے دہشت گرد رہنماء کو تقریر کرنے سے روکنے کے لئے اس سے مائک چھین کر اس رہنماء کو دھکا دے کر زمین پر گرا دیا۔

یہ بھی پڑھیں :امریکی سفارت خانہ پاکستان کیخلاف سرگرم، کوئٹہ میں امریکی حمایت یافتہ دہشتگرد کا حملہ

عینی شاہدین کے مطابق کالعدم سپاہ صحابہ کے دونوں گروپوں کے درمیان لوہے کی راڈوں اور ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال جاری تھا کہ اچانک ایک خوفناک دھماکہ ہوا اور پورے علاقے میں دھوئیں کے بادل چھا گئے۔عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ ریلی پر ہونے والا حملہ خودکش تھا، جس کے نتیجے میں 7 افراد موقع پر ہی مارے گئے۔کالعدم سپاہ صحابہ کے ترجمان کے مطابق مارے گئے 7 افراد میں سے 5 افراد کا تعلق سپاہ صحابہ اورنگزیب فاروقی گروپ سے ہے، جبکہ دو افراد عام راہگیر تھے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close