اہم ترین خبریںپاکستان

شیخ زکزاکی کی رہائی کیلیئے علامہ مقصود ڈومکی کا عاشقان اہل بیتؑ کے نام کھلا خط

شیعت نیوز : مجاہد عالم دین حضرت علامہ شیخ محمد ابراہیم زکزاکی کی جیل سے رہائی کے سلسلے میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان مقصود علی ڈومکی کا عاشقان اہل بیت اور اسلامی تحریک کے عمائدین کے نام کھلا خط

بسم اللہ الرحمن الرحیم

محترم علمائے کرام اکابرین ملت اور انقلابی ساتھیو

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

جیسا کہ آپ کے علم میں ہے کہ نائجیریا کے مجاہد عالم دین حجۃ الاسلام علامہ شیخ ابراہیم زکزاکی گزشتہ کئی سالوں سے بے جرم و خطا جیل میں ہیں، ان کی اہلیہ محترمہ بھی بغیر کسی جرم کے قید تنہائی کی صعوبتیں برداشت کر رہی ہیں۔ یہ ایسی صورتحال میں ہے کہ نائجیریا کی یزیدی حکومت کی جانب سے اس سے قبل امام بارگاہ بقیہ اللہ پر حملہ کرکے عاشقان اہل بیت کا قتل عام کیا گیا۔ یکم ربیع الاول 2015ء کے دن زاریہ میں جو المناک حادثہ رونما ہوا، اس میں جہاں متعدد بے گناہ انسان شہید ہوئے، وہاں علامہ شیخ ابراہیم زکزاکی کے تین جوان بیٹے بھی شہید ہو گئے۔

اس سے قبل جب یوم القدس کے دن آزادی فلسطین اور بیت المقدس کے سلسلے میں نائجیریا میں جو ریلی نکالی گئی تھی اس کے دوران بھی حملہ کرکے علامہ شیخ ابراہیم زکزاکی کے تین جوان بیٹوں کو شہید کیا گیا۔ چھ شہیدوں کا باپ اس وقت بے جرم و خطا قید تنہائی کی سختی جھیل رہا ہے جبکہ دنیا اسلام خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے۔ اگر ہم نے اس صورتحال پر صدائے احتجاج بلند نہ کی تو یقینا خدائے عزوجل کے سامنے ہم سے جواب طلب کیا جائے گا۔ اس صورت حال میں، میں پوری امت مسلمہ سے اپیل کرتا ہوں ہوں کہ علامہ شیخ ابراہیم زکزاکی کی رہائی کے لئے عالمی سطح پر ایک منظم اور مربوط احتجاجی تحریک شروع کی جائے۔ سوشل میڈیا پر اور ٹوئٹر پر اس سلسلے میں ٹرینڈ چلایا جائے اور ہر سطح پر اس ظلم و بربریت کے خلاف صدائے احتجاج بلند کی جائے۔

شیخ زکزاکی نہ بکنے والی اور نہ جھکنے والی شخصیت کا نام ہے، علامہ مقصود ڈومکی

میں سلام پیش کرتا ہوں سر زمین نائیجیریا کے مجاہد اور بے خوف حسینیوں کو کہ جو اس قدر ظلم اور بربریت سہنے کے باوجود آج بھی اپنے عظیم قائد اور بہادر رہنما شیخ ابراہیم زکزاکی کی رہائی کے لئے ریاستی ظلم و جبر کی پرواہ نہ کرتے ہوئے روڈوں اور راستوں پر پر احتجاج کی عملی تصویر بنے ہوئے ہیں۔ کورونا کے عالمی وبا کے باوجود نائجیریا کے مختلف شہروں میں شیخ زکزاکی کی رہائی کے لئے لئے جو احتجاج ہو رہے ہیں وہ ہم سب کے لئے درس عبرت ہے آئیے ان مومنین کو حوصلہ دیں۔ میں آخر میں اپیل کروں گا کہ شیخ بزرگوار کی آزادی کے لئے عالمی سطح پر ایسا احتجاج منظم کیا جائے جو نائجیرین حکومت کو جھکنے پر مجبور کر دے۔

جناب ابراہیم زکزاکی زخمی ہیں ان کی ایک آنکھ ضائع ہو چکی ہے جبکہ ان کے علاج و معالجہ کے لئے نائجیرین حکومت کی طرف سے کوئی سنجیدہ اقدام نظر نہیں آتا۔ اس لئے اس عالمی احتجاجی تحریک کو منظم کرنے کے لئے عالمی سطح پر پر ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی جائے جو دنیا کے مختلف ممالک کے انقلابی علمائے کرام اسلامی انقلابی تحریکوں کے نمائندگان اور اہم شخصیات پر مشتمل ہو جبکہ کمیٹی کی سربراہی حضرت علامہ شیخ ابراہیم زکزاکی کے فرزند محترم یا ان کے منتخب کردہ نمائندے کے حوالے کی جائے۔

میں امید کرتا ہوں کہ میری اس گذارش پر سنجیدگی سے غور فرمائیں گے
والسلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

مقصود علی ڈومکی
مرکزی ترجمان مجلس وحدت مسلمین پاکستان

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close