اہم ترین خبریںپاکستان

کالعدم سپاہ صحابہ کے مولویوں کا وحشیانہ پن عروج پر، اوچشریف میں ایک اور طالب علم پر بہیمانہ تشدد

پولیس نے محمد شفیق کی شکایت پرتعزیرات پاکستان دفعہ 328-Aکے تحت مقدمہ درج کرکے کاروائی کا آغاز کردیا ہے

شیعیت نیوز: کالعدم سپاہ صحابہ کے درندہ صفت امام مسجد ومدرسہ کے معلم معصوم بچوں اور بچیوں پر وحشیانہ تشدد میں مصروف، بہاولپور تھانہ اوچ شریف کی حدود میں ایک اور درندگی کا واقعہ رپورٹ ، مدرسہ ریاض العلوم میں تکفیری وہابی مولوی قاری یونس ولد عبد الحکیم کا11سالہ طالب علم پر بہیمانہ تشدد بچہ شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل ، والدین کی مدعیت میں مقدمہ درج۔

تفصیلات کے مطابق ضلع بہاولپور کے علاقے کوٹلا شیخاں اوچشریف کا رہائشی محمد حفیظ ولد حافظ شبیر جس کی عمر 11سے 12سال ہے، مدرسہ ریاض العلوم زندہ لعل موضع حیدر پورمیں زیر تعلیم ہے کو وہاں کے معلم کالعدم سپاہ صحابہ سے تعلق رکھنے والے قاری یونس ولد عبد الحکیم نے سوتوں سےبدترین تشدد کرکے شدید زخمی کردیا ۔

یہ بھی پڑھیں: سید ناصر حسین کی گمشدگی کے 10سال اور اہل خانہ پر گزری قیامتیں

واقعے کے خلاف متاثرہ بچے کے بڑے بھائی محمد شفیق ولدحافظ شبیر نے تھانہ اوچشریف میں دو گواہوں محمد بلال ولد عبد الرحمٰن اور عبد الغفار ولد حاجی اللہ بخش کے ہمراہ مقدمہ درج کرواتے ہوئے وحشی مولوی کے خلاف قانونی کاروائی کا مطالبہ کیاہے، محمد شفیق نے کہاکہ علاقہ معززین نے صلح نامے کیلئے کافی زور دیا لیکن اب مایوس ہوکر تھانے آیا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں: مشکوک واقعات سے عراق کے اندر داخلی فسادات کی بو آرہی ہے, مقتدا صدر اور عمار حکیم کا انتباہ

پولیس نے محمد شفیق کی شکایت پرتعزیرات پاکستان دفعہ 328-Aکے تحت مقدمہ درج کرکے کاروائی کا آغاز کردیا ہے ۔واضح رہے کہ  پنجاب کے مختلف اضلاع میں دینی مدارس میں معصوم طلبہ وطالبات پر وحشیانہ تشدد اور ان کے ساتھ جنسی زیادتی کےواقعات مسلسل سامنے آرہے ہیں ، تمام والدین اپنے والدین بچوں کی زندگی عزیز رکھتے ہیں تو انہیں ان وحشی مولویوں سے دور رکھیں، پنجاب حکومت ان گہناؤنی سرگرمیوں میں ملوث تمام مدارس کو فوری سیل کرنے اور ان بدکردار مولویوں اور قاریوں کو نشان عبرت بنانے کیلئے قانون سازی کرے ۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close