کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
سعودی عرب

سعودی فورسز کا شیعہ اکثریتی علاقہ پر حملہ، 8 شہری شہید

شہری اپنے حقو ق کے لئے سرگرم ہیں اور اسی سلسلے میں احتجاج جاری تھا جس پر سعودی فورسز نے فائرنگ کرکے 8 مظاہرین کو شہید کردیا ہے

شیعیت نیوز: سعودی عرب کے مشرقی علاقے قطیف میں سعودی فورسز نے کارروائی کرتے ہوئے 8 مظاہرین کا شہید کردیا ہے۔

اطلاعات کے مظابق صوبہ قطیف میں کے شہری اپنے حقو ق کے لئے سرگرم ہیں اور اسی سلسلے میں احتجاج جاری تھا جس پر سعودی فورسز نے فائرنگ کرکے 8 مظاہرین کو شہید کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آل سعود کے فوجی اہلکاروں نے صوبہ قطیف کے شیعہ اکثریتی علاقے سنابس کا گھیراو کیا ہے۔

مقامی ذرائٰع کا کہنا ہے کہ سعودی فورسز کے اہلکار جزیرہ تاروت کا گھیراو کرکے مسلسل فائرنگ کررہے ہیں جس کے نتیجے میں شہریوں میں سخت خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔

شیعہ نشین علاقے قطیف پر سعودی جارح فورسز کی لشکر کشی،8شیعہ شہری شہید ،2زخمی اور 2گرفتار

العہد نے خبردی ہے کہ سعودی عرب کے سیکیورٹی اہلکار متعدد بکتربند گاڑیوں سمیت جنوبی شہر سنابس میں داخل ہوکر پورے علاقے کا گھیراو کیا ہے۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ فوجی اہلکار مسلسل فائرنگ کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ چند روز قبل آل سعود کی نام نہاد عدالت نے 37 افراد کے سر قلم کردیے تھے۔ حقوقِ انسانی کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کا کہنا تھا کہ شہید کیے جانے والے افراد میں اکثریت شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے افراد کی تھی۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق جن افراد کا سر قلم کیا گیا ان میں سے زیادہ تر شیعہ مرد تھے جنھیں ایسے جعلی مقدمات کے ذریعے مجرم ٹھہرایا گیا جو انصاف کے بین الاقوامی معیار کے منافی ہیں اور ان کا انحصار تشدد کے بعد زبردستی لیے گئے اعترافِ جرم سے تھا۔

یاد رہے جنوری 2016 میں سعودی حکام نے ایک دن میں 47 افراد کے سر قلم کیے تھے جن میں ملک کے مشہور شیعہ عالم شیخ نمر النمر بھی شامل تھے

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close