اہم ترین خبریںپاکستان

شیعہ علماء کونسل نے قیام امن کیلئے 16 نکاتی مطالبات پیش کر دیئےمطالبات کی عدم منظوری کی صورت میں تو 18 اکتوبر کو احتجاج کا عندیہ

انہوں نے کہا کہ گزشتہ تقریباً دو ماہ سے ملک کے مذہبی طبقات میں پائی جانیوالی بے چینی اور خلفشار نے ملکی فضا کو مکدر کرنے میں کردار ادا کیا ہے

شیعیت نیوز: شیعہ علماء کونسل شمالی پنجاب کے صوبائی صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے شیعہ قیادت کی رہنمائی میں 16 نکاتی مطالبات حکومت کے سامنے پیش کر دیئے، علامہ سبطین حیدر سبزواری نے راولپنڈی میں پریس کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ دو ماہ میں ملکی فضا کو فرقہ واریت کے عفریت کی بھینٹ چڑھایا جا رہا ہے۔ سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کیخلاف قانونی کارروائی کا نہ ہونا المناک امر ہے۔

یہ بھی پڑھیں: چہلم امام حسینؑ کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئےوزیر اعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس

انہوں نے کہا کہ عزاداری سید الشہداء علیہ السلام ہمارا آئینی حق ہے، جس سے ہم ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ پنجاب بھر میں ایام عزاء کے دوران سینکڑوں ایف آئی آرز کا اندراج ناقابل قبول ہے۔ مکتب تشیع کے خلاف تکفیری عناصر کی حالیہ شدت پسندانہ ریلیاں اور ان میں لگنے والے یزیدی نعرے واضح ثبوت ہیں کہ ان تخریب کاروں کے منفی مقاصد کیا ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: عراق کے سخی عوام کا اس سال دنیا بھر کے غیر حاضر زائرین کی نیابت میں زیارت اربعین انجام دینے کا اعلان

انہوں نے کہا کہ مجوزہ زائرین پالیسی کو یکسر مسترد کرتے ہیں۔ اگر 28 صفر تک ہمارے ان جائز مطالبات پر مثبت پیش رفت نہ ہوئی تو ہم اگلے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ پریس کانفرنس میں علامہ سید سبطین حیدر سبزواری، علامہ سید جعفر عباس نقوی، علامہ غلام قاسم جعفری، علامہ سید سجاد حسین ہمدانی، علامہ سید محسن نقوی، علامہ ملک ملازم حسین علوی، علامہ سید رضوان علی گردیزی، علامہ کوثر عباس قمی، علامہ قمر جعفری، سید اظہار بخاری، سید ذیشان حیدر شمسی (مرکزی صدر جے ایس او)، سید محمد ہادی ہمدانی ایڈووکیٹ، سید نزاکت نقوی اور سید فرید نقوی بھی موجود تھے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close