لبنان

سید حسن نصراللہ کی صیہونوں کے اعصاب کے ساتھ بازی

شیعت نیوز : صیہونی سکیورٹی ایجنسی نے اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصراللہ صیہونوں کے اعصاب کے ساتھ کھیل رہے ہیں۔

صیہونی سکیورٹی ایجنسی کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج نے لبنان اور مقبوضہ فلسطین کی سرحد پرلڑائی کو روکنے کی کوشش کی لیکن سید حسن نصر اللہ نے ایک بہت بڑی کامیابی حاصل کرتے ہوئے اسرائیل پر دباؤ برقرار رکھنے اور اسرائیلی فوج کو نفسیاتی جنگ میں مبتلا رکھنے کی کوشش کی ہے۔

صیہونی سکیورٹی ایجنسی کے مطابق حزب اللہ لبنان کے سربراہ نے ذرائع ابلاغ سے دور رہ کر اور جنجال برپا کئے بغیر بازی کی ہے ۔ حزب اللہ کی طرف سے اس سلسلے میں مزید اقدامات انجام دیئے جائیں گے۔

ادھر اسرائیلی وزير جنگ بنی گانٹر نے اسرائیلی فوج کو شمالی سرحد پر بدستور باقی رہنے کی ہدایت کی ہے۔ ذرائع کے مطابق شام میں حزب اللہ کے ایک اہلکار کی اسرائیل کے فضائی حملے میں شہادت کے بعد اسرائیلی فوج پر خو ف و ہراس طاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ کی نسل پرست حکومت کی مذمت اور عوام کی حمایت کرتے ہیں۔ آیت اللہ خامنہ ای

دوسری جانب صیہونی حکومت کے ایک اخبار نے رپورٹ دی ہے کہ صیہونی فوج نے شمالی سرحد پر تعینات اپنے صیہونی فوجیوں کو حکم دیا ہے کہ جب تک حزب اللہ کے جوان لبنان کی سرحد کے اندر ہیں، ان پر فائرنگ نہ کریں۔

صیہونی اخبار یدیعوت آحارنوت نے خبر دی ہے کہ اسرائیلی فوج کو حزب اللہ کے جوانوں کے بارے میں احکامات جاری کئے گئے ہیں۔

العہد کی رپورٹ کے مطابق صیہونی فوجیوں نے سرحدوں پر تعینات اپنے فوجیوں کو حکم دیا ہے کہ جب تک حزب اللہ کے جوان لبنان کی سرحد میں ہیں، اگر چہ مسلح بھی ہوں تب بھی ان پر فائرنگ نہ کریں۔

یہ حکم ایسی حالت میں جاری ہوا ہے کہ جب حزب اللہ لبنان نے جنوبی لبنان کے سرحدی علاقوں میں نام نہاد جھڑپوں کے بارے میں صیہونی حکومت کے ڈرامے کو مسترد کر دیا ہے۔

صیہونی حکومت کے ذرائع نے گزشتہ روز دعوی کیا تھا کہ صیہونی فوجیوں کی لبنان سے ملنے والی سرحد پر جھڑپیں ہوئی لیکن اس اعلان کے کچھ ہی گھنٹے بعد حزب اللہ نے ایک بیان جاری کرکے اس خبر کی تردید کر دی اور کہا کہ حزب اللہ کے جوانوں کی جانب سے ایک بھی گولی فائر نہیں ہوئی۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close