کاپی رائٹ کی وجہ سے آپ یہ مواد کاپی نہیں کر سکتے۔
مشرق وسطی

شامی پولیس پر تکفیری دہشت گردوں کا حملہ

جنوبی صوبے درعا میں پولیس بس کے راستے میں ہونے والے بم دھماکے میں کم سے کم پانچ پولیس اہلکار ہلاک اور چودہ زخمی ہوئے۔

زخمی ہونے والوں میں سے بعض کی حالت تشویشناک ہے جس کے پیش نظر حکام نے مرنے والوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔درعا کا علاقہ گزشتہ سال کے اوائل میں شامی فوج کے کنٹرول میں آیا تھا اور دہشت گرد عناصر ہلکے اور بھاری ہتھیار تحویل میں دینے کے بدلے علاقے سے باہر نکل گئے تھے۔

قابل ذکر ہے کہ درعا آٹھ سال قبل شام کی خانہ جنگی اور دہشت گردی کا پہلا شکار بنا تھا اور اس کی بدامنی شام کے دیگر شہروں میں سرایت کرتی چلی گئی تھی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close