اہم ترین خبریںپاکستان

تکفیری وہابی دہشت گردوں کا سہولت کار ملاطاہر اشرفی قانون کے شکنجے میں پھنس گیا

سعودیہ عرب کی جانب سے پاکستان میں فرقہ وارانہ قتل عام کیلئے کالعدم جماعتوں کو فنڈنگ اسی ملاطاہر اشرفی کے ذریعے کیئے جانے کے بھی انکشافات ہوئے ہیں

شیعت نیوز: کالعدم جماعتوں کا سہولت کارپاکستان کے بدنام زمانہ تکفیری وہابی ،زانی اور شرابی ملا طاہر اشرفی قانون کے شکنجے میں پھنس گیا۔ملا طاہر اشرفی کے خلاف ایف آئی اے نے ایف اے ٹی ایف کے تحت مقدمہ درج کر لیا ،مقدمہ کے مندرجات کے مطابق ملاطاہر اشرفی منی لانڈرنگ میں ملوث پایاگیاہے۔ طاہر اشرفی کے نجی بینک اکاونٹ نمبر 3421010043960000میں کڑوروں روپے کی غیر ملکی فنڈنگ کی گئی۔

ایف آئی اے نے امکان ظاہر کیا ہے کہ طاہر اشرفی کو ملنے والے فنڈز کالعدم سپاہ صحابہ ، لشکر جھنگوی کے ذریعےدہشت گردی میں استعمال کیئے گئے ہیں ۔ مقدمہ کے مندرجات کے مطابق یہ فنڈنگ نارویجین چرچ اور جرمنی کے سفارت خانے کی جانب سے کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:تکفیری دہشت گردوں کے پشت پناہ ملا طاہر اشرفی کے اکاونٹس میں مغربی ممالک سے مشکوک ٹرانزکشن کا انکشاف

طاہر اشرفی کو 2 کروڑ 25 لاکھ 8 ہزار 3 سو 60 روپے ناویجین شرچ کی جانب سے ایڈ کی صورت میں بھیجے گئے جرمنی کی ایمبیسی کی جانب سے 43 لاکھ 44 ہزار 5 سو 16 روپے ٹرانسفر کیئے گئےیہ رقوم فیصل بینک کیلوری گراونڈ لاہور میں اکاونٹ نمبر 3421010043960000 میں ٹرانسفر کیئے گئے۔

واضح رہے کہ ملا طاہر اشرفی اپنی کرداری کے سبب پاکستان بھرمیں معروف ہے ۔ہزاروں شیعہ سنی پاکستانیوں سمیت پاک فوج کے جوانوں کے قاتل عام میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ اور لشکر جھنگوی کے واصل جہنم سرغنہ ملک اسحاق اور احمد لدھیانوی کے ساتھ بھی اس کا پرانا یارانہ ہے ۔

سعودیہ عرب کی جانب سے پاکستان میں فرقہ وارانہ قتل عام کیلئے کالعدم جماعتوں کو فنڈنگ اسی ملاطاہر اشرفی کے ذریعے کیئے جانے کے بھی انکشافات ہوئے ہیں ۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے تحقیقات کے دائرہ کار کو وسعت دیتے ہوئے تمام پہلوؤں کا جائرہ لیں اور ملا طاہر اشرفی کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے ۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close