پاکستان

تکفیری مولوی سپاہ صحابہ کی اعلیٰ قیادت کو شراب سپلائی کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

زرائع کے مطابق کالعدم سپاہ صحابہ کی اعلیٰ قیادت وفاقی و صوبائی اہم شخصیات کے توسط سے واقعہ کو دبانے اور گرفتار تکفیری مولوی کو رہا کرنے کے حوالے سے پولیس افسران پر دباؤ بڑھا رہی ہے

شیعت نیوز :تکفیری مولوی کالعدم دہشتگرد جماعت سپاہ صحابہ کی قیادت کو بین الاقامی برانڈ کی شراب سپلائی کرتے ہوئے کراچی پولیس کے ہاتھوں گرفتار۔  ضبط کی گئی شراب جامعہ صدیق اکبر سپلائی کی جا رہی تھی۔

اطلاعات کے مطابق کراچی پولیس نے خفیہ اطلاع ملنے پرناگن چورنگی کے قریب مدرسے کی وین سے بڑی مقدار میں بین الاقامی برانڈ کی شراب اور فرقہ وارانہ لٹریچر برآمد کرتے ہوئے وین ڈرائیور کو گرفتار کر لیا۔ پولیس کے مطابق وین ڈرائیور ناگن چورنگی پر واقع کالعدم دہشتگرد جماعت سپاہ صحابہ کے مرکز جامعہ صدیق اکبر کا معلم اور کالعدم سپاہ صحابہ کراچی ڈویژن کے شعبہ مالیات کا زمہ دار بھی ہے۔ مقامی تھانے کے اہلکار نے نام نا ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ جامعہ صدیق اکبر کی وین سے بھاری مقدار میں بین الاقامی برانڈ کی شراب اور فرقہ وارانہ لٹریچر برآمد ہونے کی اطلاع پر پولیس اور انتظامیہ کے دوڑیں لگ گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں :محمد بن سلمان کادورہ پاکستان، سعودی سفیر نے تکفیری شرابی زانی ملا طاہر اشرفی کو خصوصی ٹاسک سونپ دیا

زرائع کے مطابق کالعدم سپاہ صحابہ کی اعلیٰ قیادت وفاقی و صوبائی اہم شخصیات کے توسط سے واقعہ کو دبانے اور گرفتار تکفیری مولوی کو رہا کرنے کے حوالے سے پولیس افسران پر دباؤ بڑھا رہی ہے۔مقامی تھانے کے مطابق گرفتار تکفیری مولوی گزشتہ کئی سالوں سے کالعدم سپاہ صحابہ کی مقامی اور اعلیٰ قیادت کو شراب سپلائی کر رہا ہے۔ تفتیشی افسر کے مطابق گرفتار تکفیری مولوی سے ابتدائی تفتیش کے نتیجے میں پولیس نے ابو الحسن اصفہانی روڈ پر واقع شراب خانے کے مالک کو بھی شامل تفتیش کر لیا ہے۔کہا جا رہا ہے کہ گرفتار تکفیری ملاں گزشتہ 2 سال سے ابوالحسن اصفہانی روڈ پر واقع شراب خانے سے شراب لیکر کالعدم سپاہ صحابہ کی قیادت کو پہنچایا سپلائی کیا کرتا تھا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close