اہم ترین خبریںپاکستان

طلباء یونین کی بحالی کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں، مرکزی صدر آئی ایس او عارف حسین

طلبہ یونینز کی بحالی سے معاشرے میں جمہوری اقدار پروان چڑھنے کیساتھ ساتھ ملک میں جمہوریت مضبوط ہوگی

شیعت نیوز: وزیراعظم عمران خان کی جانب سے طلبہ یونینز بحالی کے حوالے سے بیان کو آئی ایس او پاکستان کے مرکزی صدر عارف حسین نے خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ طلبہ یونینز کی فوری بحالی وقت کی ضرورت ہے، طلباء یونین پر پابندی کے باعث طلبہ اپنے آئینی حق سے محروم ہیں، طلبہ یونینز کی بحالی سے معاشرے میں جمہوری اقدار پروان چڑھنے کیساتھ ساتھ ملک میں جمہوریت مضبوط ہوگی۔ پر پابندی سے جامعات میں مکالمہ کی فضا ختم ہوئی اور شدت پسندی میں اضافہ ہوا۔

یہ بھی پڑھیں: محمد عباس جعفری بھاری اکثریت سے آئی ایس او کراچی ڈویژن کے نئے میر کاروں منتخب

ان کا کہنا تھا کہ ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ طلبا ءیونین کی بحالی کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں ماضی میں یونین کی بحالی کے محض دعوے کئے جاتے رہے اور منافقانہ طرز عمل پہ حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔

یہ بھی پڑھیں: مقامات مقدسہ کی حفاظت کے لئے جان کی بازی لگا دیں گے، علامہ سید سبطین سبزواری

انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومتوں کی طرح موجودہ حکومت طلبا یونین کی بحالی کے لولی پاپ کی بجائے علمی اقدامات کیلئے پیش رفت کرتے ہوئے طلبا یونین کو بحال کروا کر الیکشن کا جلد انعقاد کروایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: اگر آپ میں انتظامی امور کی صلاحیت نہیں تو ذمہ داری قبول نہ کریں

طلبہ سے گفتگو میں عارف حسین الجانی کا کہنا تھا کہ آئی ایس او پاکستان کا پہلے دن سے یہی موقف تھا کہ طلبہ یونین کا بحال ہونا انتہائی اہمیت کا حامل ہے، طلباء یونین پر پابندی کے باعث طلبہ اپنے آئینی حق سے محروم ہیں، طلبہ یونینز کی بحالی سے معاشرے میں جمہوری اقدار پروان چڑھنے کیساتھ ساتھ ملک میں جمہوریت مضبوط ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں: عالم اسلام کے مسائل کا حل امت مسلمہ کے درمیان تعاون اور یکجہتی ہے، آیت اللہ اراکی

انہوں نے مزید کہاکہ طلبہ یونین پر پابندی سے طلبہ تعلیمی اداروں کے آئین کے تحت حاصل ہونیوالے بنیادی حقوق و اختیار سے محروم ہیں، جس کے سبب طلبہ کو بنیادی مسائل حل کرنے کیلئے نااہل انتظامیہ کے دفتر کے چکر لگانے پڑتے ہیں طلبہ یونین کی بحالی سے تعلیمی استعداد بڑھے گی۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close