دنیا

تمام عالم اسلام میں عید میلاد النبی ؐ کی تقریبات کا انعقاد اور ہفتہ وحدت کا آغاز

شیعت نیوز: تمام عالم اسلام میں عید میلاد النبی ؐ کی تقریبات کا انعقاد اور ہفتہ وحدت کا آغاز ہوگیا ہے اور مختلف ملکوں میں جشن کی محفلیں اور جلوس محمدی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم برآمد کیے گئے۔

پاکستان اور ہندوستان میں جشن عید میلاد النبیؐ بڑی ہی شان و شوکت کے ساتھ منایا گیا اور برصغیر کی فضائیں بھی درود و سلام کی صداؤں سے گونجتی رہی۔

یہ بھی پڑھیں : جعفریہ ڈیزاسٹر سیل کے زیر اہتمام ملک کی تاریخ کا سب سے بڑا جشن عید میلادالنبیؐ اور چراغاں

مختلف شہروں کی سڑکوں اورکوچوں کو خوبصورتی کے ساتھ سجایا گیا تھا اور جگہ جگہ نعت خوانی اور محفل میلاد کا سلسلہ منعقد ہوا ۔

عید میلاد النبیؐ کے موقع پر پاکستان میں سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئےتھے۔ پاکستان کے صدرڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان نے جشن میلادالبنی ؐ کے موقع پر پوری ملت اسلامیہ کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے آپ کے اسوہ حسنہ کی پیروی کرنے کی اپیل کی ہے۔

ہندوستان میں بھی جشن میلاد البنی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پوری شان شوکت کے ساتھ منایا جارہا اور دارالحکومت دہلی سمیت مختلف شہروں میں جشن کے سیکڑوں جلوس برآمد کیے گئے ہیں جن میں ہزاروں افراد شریک تھے۔

اس موقع پر شیعہ سنی اتحاد اور بین المذاہب ہم آہنگی کا شاندار مظاہرہ دیکھنے میں آیا۔ ہندوستان کےصدر رام ناتھ کووند اور وزیراعظم نریندر مودی نے میلاد النبیؐ کے موقع پر ملک میں مسلمانوں کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پیغمبرحضرت محمدؐکی تعلیمات ہمیں معاشرے میں ہم آہنگی اور ہمدردی کے احساس کو بڑھانے کا درس دیتی ہے۔

یمن، لبنان، عراق اور شام سمیت عالم اسلام کے بیشتر ملکوں میں سے جشن میلادالبنیؐ کے آغاز اور محافل سیرت کے انعقاد کی خـبریں موصول ہوئی ہیں۔

یمنی عوام نے دارالحکومت صنعا میں بارہ ربیع الاول کو عظیم الشان جشن میلاد النبیؐ  کا اہتمام کیا گیا تھاجس میں لاکھوں کی تعداد میں عاشقان نبی ؐ نے شرکت کی۔

یمن کے دیگر شہروں میں بڑے پیمانے پر جشن میلادالنبی صلی اللہ علیہ والیہ وسلم کے موقع پر عظیم الشان ریلیاں اور جلوس نکالے گئےاور بنی پاکؐ سے اپنی والہانہ محبت کا اظہار کیا۔

اس موقع پر تحریک انصار اللہ کے سربراہ سید عبد الملک بدر الدین الحوثی نے اجتماع کو خطاب کیا۔ساڑھے چار برس سے سعودی عرب اور اسکے اتحادیوں کی جارحیت سے روبرو یمنی عوام، سال کی اہم سیاسی اور مذہبی مناسبتوں پر اپنے تمام تر غم و اندوہ اور دشواریوں کو بھول کر بڑے عالیشان اور روح پرور مناظر دنیا کے سامنے پیش کرتے ہیں۔

ملائشیاکے دارالحکومت کوالالامپور میں نہایت عالیشان طریقے سے جشن میلاد النبیؐ کا اہتمام کیا گیاتھا۔ اس موقع پر عاشقان مصطفیٰ ؐ اپنے خاص مقامی لباس پہن کر جشن میں حاضر ہوئے۔

بارہ ربیع الاول کے مبارک موقع پر ایران کے مختلف علاقوں میں سنی مسلمانوں کے ساتھ ساتھ شیعہ مسلمان اور علمائے کرام، میلاد النبی ؐ کے جشن میں شریک ہیں اور نبی کریم حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سیرت پاک پر ثابت قدم رہنے کا عہد کر رہے ہیں۔

میلاد النبیؐ کے جشن کے ساتھ ساتھ ایران اور دنیا کے مختلف ملکوں میں ہفتہ وحدت کا بھی آغاز ہوگیا ہے۔ہفتہ وحدت کی مناسبت سے ہونے والے سیمیناروں اور کانفرنسوں میں مقررین کی جانب سے مسلمانوں کے درمیان اتحاد و یکجہتی کی ضرورت پر زور دیا جارہا ہے۔

بانی انقلاب اسلامی حضرت امام خمینی ؒ نے بارہ سے سترہ ربیع الاول کے ایام کو ہفتہ وحدت کے طور پر منانے کا حکم دیا تھا جس کا مقصد مسلم امہ کے درمیان اتحاد و یکجہتی کو فروغ دے کے دشمنان اسلام کی شازشوں اور ریشہ دوانیوں کو ناکام بنانا تھا۔

اہل سنت راویوں اور علماء کے مطابق بارہ ربیع الاول پیغمبراسلامؐ کی ولادت باسعادت کی تاریخ ہے جبکہ شیعہ راویوں اورعلماء کے مطابق پیغمبراسلام کی ولادت باسعادت کی تاریخ سترہ ربیع الاول ہے اسی مناسبت سے ایران کے بانی حضرت امام خمینیؒنے بارہ سے سترہ ربیع الاول تک کی تاریخ کو ہفتہ وحدت قراردیا تھا اور اس کے بعد سے ہر سال ایران اور پوری دنیا میں ان ایام میں ہفتہ وحدت منایا جاتا ہے۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close