اہم ترین خبریںعراق

ترکی کے حملوں کا کرارا جواب دیا جائے گا۔ عراق

شیعت نیوز : حکومت عراق نے اپنی سرزمین پر ترک فضائیہ کے حملے کا کرارا جواب دینے کا اعلان کیا ہے۔

عراق کی مسلح افواج کے ترجمان یحیی رسول نے مقامی ٹیلی ویژن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شمالی عراق پر ترکی کا حملہ اشتعال انگیز اور اچھی ہمسائیگی کے اصولوں کے منافی ہے۔

انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ عراق ترکی کو آئندہ ایسے حملوں کی ہرگز اجازت نہیں دے گا۔ انہوں نے کہا کہ ترکی کے حملوں کا مناسب وقت پر کرارا جواب دیا جائے گا۔

ترکی کی وزارت دفاع نے بدھ کے روز کہا ہے کہ اس کے جنگی طیاروں نے شمالی عراق میں ’’پی کے کے‘‘ نامی گروپ کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔ قبل ازیں ترک فوج نے شمالی عراق میں ’’پی کے کے‘‘ کے خلاف فوجی آپریشن کا اعلان کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ کا شام کے خلاف سخت پابندیاں عائد کرنے کا اعلان

شمالی عراق پر ترک فضائی کی بمباری کے بعد عراقی وزارت خارجہ نے بغداد میں متعین ترک سفیر کو طلب کرکے اس معاملے پر شدید احتجاج کیا ہے۔

دوسری جانب عراق کے دارالحکومت بغداد کے گرین زون میں امریکی سفارت خانے کے قریب چند راکٹ داغے گئے ہیں۔

فارس خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراق کے دارالحکومت بغداد کے گرین زون (الخضرا) علاقے میں امریکی سفارت خانے کے قریب 4 راکٹ داغے گئے۔

راکٹ حملے کے بعد خطرے کے سائرن بجنے لگے۔ ابھی تک اس حملے میں جانی نقصان کے حوالے سے کوئی رپورٹ سامنے نہیں آئی ہے۔ چند روز قبل بھی التاجی اور البلد کے امریکی فوجی اڈوں کے قریب راکٹوں سے حملہ ہوا تھا۔

عراقی عوام اور سیاسی اور مذہبی جماعتیں ملک سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا مطالبہ کر رہی ہیں جبکہ عراق کی پارلیمنٹ نے بھی اس ملک سے امریکہ کے دہشت گرد فوجیوں کے انخلا کا بل اکثریتی رائے سے منظور کیا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close