اہم ترین خبریںمشرق وسطی

سعودی عرب کے بعد اسرائیل کے دوست عرب امارات کے حکمرانوں کی عیاشی کے چرچے

دوسری جانب ہے فیسٹیول نے خاتون اہلکار کے ساتھ جنسی استحصال کے واقعے پر ابوظہبی میں ہونے والے لٹریچر فیسٹیول میں اپنی خدمات جاری رکھنے سے احتجاجاً انکار کردیا ہے۔

شیعیت نیوز: خود کو امت مسلمہ کی رہبری کا دعویدار اور ٹھیکیدار قرار دینے والے عرب حکمرانوں کی عیاشیوں کے چرچوں نے امت مسلمہ کے سر شرم سے جھکادیئے ہیں۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے بعد عرب امارات کے وزیر شیخ نہیان بن مبارک کا بھی جنسی اسکینڈل سامنے آگیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی خاتون کیٹلن مکنمارا نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے وزیر برائے رواداری شیخ نہیان بن مبارک نے لٹریچر فیسٹیول کی تیاری کے دوران جنسی استحصال کیا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان، افواج پاکستان اور دین اسلام کے خلاف سوشل میڈیاپر موجود مواد پر پابندی عائد

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق معروف ادبی و ثقافتی ادارے ہے فیسٹیول کی منتظم برطانوی خاتون 32 سالہ کیٹلن مکنمارا نے سنڈے ٹائمز کو انٹرویو دیتے ہوئے الزام عائد کیا کہ متحدہ عرب امارات کے وزیر برائے رواداری شیخ نہیان بن مبارک نے انہیں فیسٹیول کی تیاری کے سلسلے میں ایک جزیرے میں بلایا اور جنسی زیادتی کی کوشش کی۔

برطانوی خاتون نے مزید کہا کہ مجھے اندازہ تھا کہ ایک طاقتور شخص میرے ساتھ کیا کرسکتا ہے، جہاں ایک شہزادی کو پسند کی شادی کی وجہ سے غائب کردیا جاتا ہو وہاں میرے ساتھ بہت کچھ ہوسکتا تھا اس لیے میں نے اس وقت معاملہ نرمی سے ٹال دیا۔

یہ بھی پڑھیں: اس وقت جو کچھ اس وطن میں ہورہا ہےاس کے پیچھے فقط اندرونی نہیں بلکہ بیرونی قوتیں بھی کارفرماہیں،علامہ راجہ ناصرعباس

دوسری جانب ہے فیسٹیول نے خاتون اہلکار کے ساتھ جنسی استحصال کے واقعے پر ابوظہبی میں ہونے والے لٹریچر فیسٹیول میں اپنی خدمات جاری رکھنے سے احتجاجاً انکار کردیا ہے۔

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close