دنیا

یو این سیکریٹری جنرل کی ایران پر پابندیوں کے منفی اثرات کی تصدیق

شیعہ نیوز: اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے ایران سے متعلق انسانی حقوق کی ایک رپورٹ میں امریکہ کی یکطرفہ پابندیوں سے ایرانی عوام کو درپیش مشکلات اور اس کے منفی اثرات کی تصدیق کردی۔

انٹونیو گوٹیرش نے مزید کہا ہے کہ امریکی پابندیوں سے ایران میں انسانی ہمدردی کی بنیاد سے متعلق اقدامات پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے پہلی بار کے لئے ایران مخالف امریکی پابندیوں کے منفی اثرات کی تصدیق کی۔

یہ بھی پڑھیں : ایران کا امریکہ کے ساتھ دو طرفہ مذاکرات کا کوئی ارادہ نہیں

انہوں نے اپنی رپورٹ میں لکھا کہ امریکہ نے 2019 کے 22 اپریل کو ایرانی تیل کی خریداری کی استثنی کے خاتمے کے بعد اسے تجدید نہیں کرتے ہوئے خرید کرنے والے ممالک کی دھمکیاں دی۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکی حکام کے مطابق، 2018 کے مئی مہینے سے ایران پابندیوں کے نتیجے میں 10 ارب ڈالر تیل کی آمدنی کو حاصل نہیں کرسکا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ امریکی پابندیوں سے ایران کی میزبانی میں پناہ گزین افراد کی صورتحال میں منفی اثرات مرتب ہو جاتے ہیں۔

گوٹیرش نے آئی ایم ایف کی جانب سے ایران میں افراط زر کی شرح کے لگانے والے تخمینے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایران مخالف پابندیاں اس ملک میں افراط زر 50 فیصد تک اضافہ کیا جائے گا جو 1980 سے سب سے زیادہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ 2016 کو جوہری معاہدے کے نفاذ کے آغاز کے ساتھ بعض عالمی کمپنیوں نے ایران کے ساتھ اپنی سرگرمیوں کی نئی بحال کرتے ہوئے مگر اب اس ملک کے ساتھ باہمی تعاون کو منقطع کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی تنظیموں نے اپنی تشویش کا اظہار کیا کہ پابندیاں اور بینکاری رکاوٹیں غیرقانونی طور پر ادویات کی پیداواری، دستیابی اور تقسیم، طبی سازو سامان کی تیاری پر منفی اثرات پڑسکتی ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close